کسانوں کو بہتر سروسز کی فراہمی کیلئے نیا انقلابی پروگرام شروع کر نیکا فیصلہ 

کسانوں کو بہتر سروسز کی فراہمی کیلئے نیا انقلابی پروگرام شروع کر نیکا فیصلہ 

  

ملتان (سٹی رپو رٹر)صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی کی زیر صدارت پنجاب میں ”ماڈل ویلجز پروگرام“ کے ضمن میں زراعت ہاؤس میں اعلیٰ سطحی اجلاس منعقد ہوا۔ میٹنگ میں ماڈل ویلجز کے قیام کے بارے میں مجوزہ پراجیکٹ اور نمایاں خدوخال کا جائزہ لیا گیا۔ اس موقع پر اسد رحمان گیلانی سیکرٹری زراعت پنجاب، ڈاکٹر عابد محمود، ڈاکٹر انجم علی، ملک محمد اکرم، غلام صدیق، محمد رفیق اختر، عامر حمید، آفاق (بقیہ نمبر1صفحہ10پر)

ٹوانہ بھی موجود تھے۔ حبیب بینک کے ہیڈ آف فنانس ڈویلپمنٹ عامر حمید کی جانب سے کسانوں کو گڈز اور سروسز کی فراہمی کے سلسلے میں کریڈٹ بارے تفصیلی بریفنگ دی۔ صوبائی وزیر زراعت سید حسین جہانیاں گردیزی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کاشتکاروں کی معاشی خوشحالی کے لیے دیہی ترقی کے مربوط پروگرام پر عمل درآمد کی ضرورت ہے۔ اس معاہدے کے تحت حبیب بینک، کسانوں اور حکومت میں ایک ملٹی ریلیشن شپ تخلیق ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ٹیکنالوجی، کریڈٹ اور کامرس کے اشترک سے ایک بنیادی نظریہ کی ترویج کے ذریعے سے ایک کامیاب ویلج ماڈل پروگرام متعارف کرایا جائے گا۔ پراجیکٹ کا مقصد کسانوں کو پیشہ ورانہ طور پر منسلک کرنے کے ساتھ ساتھ ان کو سوشل سیکٹر میں بھی معاونت فراہم کرنا ہے۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ کسانوں کو بہتر سروسز کی فراہمی کے لیے صوبائی محکموں آبپاشی، جنگلات، فشریز، تعلیم اور صحت کے باہمی اشتراک سے ایک نیا سسٹم متعارف کرایا جائے گا جس سے پنجاب میں فی ایکڑ پیداوار میں اضافے کے ساتھ ساتھ کاشتکاروں کی آمدن بڑھے گی اور ملک خوشحال ہوگا۔ سیکرٹری زراعت پنجاب اسد رحمان گیلانی نے اجلاس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ زراعت پنجاب کے پاس رجسٹر ڈ کاشتکاروں کا ڈیٹا موجود ہے جو پاس بک سے زیادہ مستند ہے۔ ایگریکلچر ڈیپارٹمنٹ کے تحت کاشتکاروں کو سبسڈی اور بلا سود قرضہ جات کی فراہمی کے لیے شفافیت کو یقینی بنایا جارہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب میں کاشتکاروں کی خوشحالی کے لیے متعدد عملی اقدامات اٹھائے جار ہے ہیں۔

جائزہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -