زکریا یونیورسٹی: ڈیڈ لاک ختم‘ ڈیلی ویجز ملازمین کا احتجاج‘ نعرے بازی 

زکریا یونیورسٹی: ڈیڈ لاک ختم‘ ڈیلی ویجز ملازمین کا احتجاج‘ نعرے بازی 

  

ملتان(سپیشل رپورٹر) زکریا یونیورسٹی کے ڈیلی ویجز ملازمین کو مستقل کرنے کے حوالے سے ایمپلائز یونین اور یونیورسٹی انتظامیہ میں ڈیڈ لاک ختم ہوگیا، گزشتہ روز ایمپلائز کی بڑی تعداد  نے ایڈمن بلاک کے سامنے اکھٹے ہوکر احتجاج کیا اور انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی کی ملازمین کی ہڑتال کی وجہ سے دفاتر میں کام بری طرح متاثر ہوا بعدازں انتظامیہ اور یونین کے رہنماوں ملک صفدر حسین، رانا مدثر مشتاق، ملک آصف اوردیگر میں مذاکرات ہوئے جس میں وائس چانسلر(بقیہ نمبر33صفحہ10پر)

 ڈاکٹر منصور اکبرکنڈی نے ملازمین کو مستقل کرنے کے حوالے سے بنائی گئی کمیٹی کے14جنوری کے اجلاس کی منظوری دی جس میں تمام فائلیں مکمل کی جائیں گی اور ایجنڈا مرتب کرکے کیس سینڈیکیٹ  کیلئے جمع کرایا جائے گا اور 23جنوری کو ہونے والیسینڈیکیٹ کے اجلاس میں پیش کیا جائے گاجس کے بعد ملازمین نے احتجاج ختم کردیا، ملک صفدر کا کہنا تھا کہ ملازمین کی مستقلی تک یونین عہدیدار حلف نہیں اٹھائیں گے، اگر اس کیس میں تعطل لانے کی کوشش کی گئی تو احتجاج کا دائرہ وسیع کردیا جائے گا۔ اس ضمن میں ایمپلائز یونین کے جاری کردہ بیان کے مطابق ملک محمد عامر ڈوگر وزیر مملکت برائے سیاسی امور پاکستان نے گزشتہ روز ملازمین کے احتجاج کے موقع پر جامعہ زکریا آمد ہوئی۔ جس کے بعد ملک محمد عامر ڈوگر نے   وائس چانسلر منصور اکبر کنڈی  سے  خصوصی ملاقات کی اور ملاقات میں ڈیلی ویجز ملازمین کو جلد ریگولر کرنے کا کہا۔ جس پر وائس چانسلر منصور اکبر کنڈی  نے کہا کہ بہت جلد ڈیلی ویجز ملازمین کو ریگولر کر دیا جائے گا۔ اس کے علاوہگزشتہ روز ہونے والے احتجاج برائے ریگولرائزیشن ڈیلی ویجز، کنٹریکٹ، ایڈہاک کے بارے میں تمام  ملازمین  کو آگاہ کیا گیا ہے کہ  رجسٹرار  اور  وائس چانسلر  نے ملک صفدر حسین، صدر EWA سے وعدہ کیا ہے کہ 14 یا 15جنوری کو سکروٹنی کمیٹی کی میٹنگ ضرور ہو گی اور ملازمین کا کیس اسی سینڈیکیٹ جو کہ مورخہ 23 جنوری، 2021 کو ہو رہی ہے کے مین ایجنڈے میں شامل ہو گا اگر کسی بھی وجہ سیسکروٹنی کمیٹی کی میٹنگ میں تاخیر ہوئی تو سینڈیکیٹ کی میٹنگ بھی نہیں ہو گی۔ تمام ملازمین اطمینان رکھیں اور متحد رہیں۔

نعرے بازی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -