گیس‘ بجلی گھنٹوں بند‘ کاروبار متاثر‘ مختلف شہروں میں مظاہرے 

گیس‘ بجلی گھنٹوں بند‘ کاروبار متاثر‘ مختلف شہروں میں مظاہرے 

  

 مظفرگڑھ‘ عبدالحکیم‘ محسن وال‘ شاہ جمال‘ خان گڑھ‘ کوٹ ادو(بیورو رپورٹ‘تحصیل رپورٹر‘ نامہ نگار‘ سٹی رپورٹر‘ نمائندہ پاکستان)سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ کا مسئلہ شدت اختیار کرگیا،گیس کی لوڈشیڈنگ نے شہریوں کو پریشان کردیا،گیس لوڈشیڈنگ کے خلاف خواتین اور خواجہ سرا سراپا احتجاج بن ہوگئے.تفصیلات کیمطابق شہر میں گزشتہ 2 ہفتوں سے شہر کے مختلف علاقوں میں محلہ شیخوپورہ،بخاری والا،گارڈن روڈ،جھنگ روڈ، ریلوے روڈ،راولے والا،خورشید آباد،کوتوال والا،کربلا روڈ،غوث کالونی سمیت شہر کے مختلف علاقوں میں سوئی گیس کی(بقیہ نمبر34صفحہ10پر)

 لوڈشیڈنگ نے شہریوں کی زندگی اجیرن کردی،سوئی گیس نہ ہونے کے باعث ناشتہ اور دوپہر کا کھانا بنانا بھی ناممکن ہوگیا جس کی وجہ سے دفاتر اور کاروبار پر جانے والے شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے،سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ کے خلاف وارڈ نمبر 10 میں خواتین اور خواجہ سراؤں نے احتجاجی مظاہرہ کیا،مظاہرے میں بچے بھی شریک تھے،مظاہرین نے گنیش واہ روڈ بلاک کرکے محکمہ سوئی گیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی،ٹرانس جینڈر ایسوسی ایشن کی صدر شاہانہ عباس شانی اور دیگر خواتین کا کہنا تھا کہ ہفتے میں صرف ایک روز گیس آتی ہے جبکہ ہفتے کے باقی دنوں میں گھر میں کھانا بنانا ناممکن ہوجاتا ہے اور بازار سے کھانا منگوانا پڑتا ہے.ان کا کہنا تھا کہ مزدور پیشہ خاندان کی پہلے ہی دو وقت کی روٹی مشکل ہوگئی ہے وہ سلنڈر کہاں سے بھروائیں۔ موسم سرما کی آمد کے ساتھ ہی عبدالحکیم و مضافاتی علاقہ جات گیس کا استعمال بڑھ جانے کے سبب سوئی گیس کا پریشر بالکل کم ہوچکاہے خصوصا صبح اور رات کے اوقات میں تجارتی و گھریلوصارفین گیس کے سلنڈر استعمال کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں کمرشل صارفین نے بتایا کہ رات بھر گیس کی بندش سے کاروبارزندگی ٹھپ ہوگیا ہے گھریلو صارفین نے کہا کہ علی الصبح گیس کی لوڈشیڈنگ و کم پریشرکے سبب سکول و دفاتر جانیوالے طلباء و ملازمین کو ناشتہ کے بغیر جانا پڑرہا ہے جبکہ سرشام گیس کا پریشر بالکل کم ہوجانے کی وجہ سے کھانا ہوٹلوں سے خریدنا پڑتا ہے یا پھر دوہری قیمت میں گیس سلنڈر استعمال کرنا پڑ رہا ہے۔دوسری جانب صارفین نے اپنی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے کمپریشر کا استعمال شروع کردیا ہے جس کے سبب دیگر صارفین حالیہ کم پریشر اور لوڈشیڈنگ کے سبب  ذہنی اذیت کا شکار ہورہے ہیں،متاثرین نے جی ایم گیس ملتان سے سوئی گیس کا پریشر بہتر کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ میاں چنوں شہر دیگر علاقوں میں گیس کی 24گھنٹے کی طویل لوڈشیڈنگ نے عوام کو انتہائی پریشانی کا شکار بنا دیا ہے،گیس کی طویل لوڈشیڈنگ نے خواتین کو ذہنی اذیت سے دوچار کررکھا ہے،گیس کی لوڈشیڈنگ پر شہریوں،ادریس اکرم،جاوید سعید،اکبر جٹ،وقاص علی،ناصرعلی،ریاض احمد،قمر جاوید،رانا اشرف،ایوب علی سمیت  ودیگردرجنو ں شہریوں نے کہا کہ میاں چنوں واحد شہر ہے جہاں گرمیوں میں بھی گیس کی طویل لوڈشیڈنگ ہوتی ہے،اور اب سردیوں میں سوئی گیس کا نام و نشان تک نہیں ہے،شہریوں نے محکمہ سوئی گیس پر شدید غم و غصے کااظہار کرتے ہوئے مقامی سیاستدان اور حکومت سے ناراضگی کااظہا کرتے ہوئے کہا کہ گیس کی طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف احتجاج کیا جائے گا۔ بجلی اور گیس کی بد ترین بندش کے باعث کاروبار زندگی معطل ہوگیا‘ چولہے ٹھنڈے ہونے پر شہریوں کا احتجاج بڑھ گیا‘ امیدوار حلقہ پی پی 276محمد یاسین کویتی و دیگر شہریوں ملک اشرف اعوان،مرید احمد ندیم بھٹہ ودیگر نے شدید احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ کئی روز سے شاہجمال اور گردونواح میں بجلی کی کئی کئی گھنٹے کی  بندش اور بار بار ٹرپنگ کے باعث نہ صرف گھریلو الیکٹرک اشیا کے جلنے کے باعث ہزاروں روپے کے نقصان  کا سامنا ہے بلکہ چھوٹی انڈسٹری اور آرا مشینوں کی بندش کے باعث مزدوروں کو بے روزگاری کا بھی سامنا ہے اس طرح کاروبار زندگی معطل ہو کر رہ گیا ہے انہوں نے بجلی کے مسائل پر قابو پانے کا مطالبہ کیا ہے اسی طرح سابق وائس چئیر مین یونین کونسل شاہ جمال ملک محمد منور سندیلہ،ملک ظفر سندیلہ،سعد ملک،ملک ایمل و دیگر نے گیس کی مسلسل بندش اور پریشر کی انتہائی کمی کی شکایت کرتے ہوئے بتایا کہ گھروں کے چولہے ٹھنڈے ہو چکے ہیں ایل پی جی اور لکڑی مہنگی ہونے کی وجہ سے غریبوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے انہوں نے جی ایم سوئی گیس سے مسئلہ حل کرنے کا مطالبہ کیاہے۔ سوموار کے روز خانگڑھ شہر سمیت گردونواح میں بجلی کی ترسیل کا نظام درہم برہم رہا، ہرگھنٹے بعد کئی کئی گھنٹے بجلی خودساختہ طور پر بند کردی جاتی رہی جس سے کاروبار زندگی تباہ ہو کر رہ گئی جبکہ گھریلو امور سرانجام دینے میں بھی کافی مشکلات کا سامنا رہا جبکہ تاجروں ' شہریوں نے واپڈا خانگڑھ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ لائن لاسسز کور کرنے کی غرض سے گزشتہ کئی روز سے بجلی کی آنکھ مچولی کا سلسلہ جاری ہے انہوں نے احتجاج کرتے چیف ایگزیکٹو میپکو ملتان سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ میاں چنوں میں تاحال کئی کئی گھنٹوں کی لوڈشیڈنگ جاری ہے‘ ملک بھر میں بجلی کی معطلی کے بعد میاں چنوں میں گزشتہ روز بھی کئی کئی گھنٹے کی لوڈشیڈنگ جاری رہی،طویل لوڈشیڈنگ سے کاروباری مراکز،انڈسٹریزاور بجلی کے کاموں سے وابستہ کاروباری طبقہ اور عام عوام شدید پریشانی کاشکار رہی۔ گزشتہ سے پیوستہ روز سے بجلی کی طویل لوڈ شیڈنگ کے بعد مسلسل غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ نے کاروباری زندگی کو بری طرح متاثر کردیا ہے چھوٹی صنعتوں اور ورک شاپس درزی  بجلی کے بند ہونے سے شدید مشکلات سے دوچار ہیں شہریوں اظہر رمضان کامران خان محمد ارشد محمود وقار عابد ودیگر نے چیف میپکو سے بجلی کی بلا تعطل فراہمی کا مطالبہ کیا ہے۔

گیس لوڈ شیڈنگ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -