ایف بی آر: ٹیکس ادائیگی کیلئے الیکٹرانک سسٹم متعارف‘ ریکوری میں تیزی 

ایف بی آر: ٹیکس ادائیگی کیلئے الیکٹرانک سسٹم متعارف‘ ریکوری میں تیزی 

  

 ملتان (نیوز رپو رٹر) ایف بی آرنے ٹیکسز کی ادائیگی کا الیکٹرانک طریقہ کار متعارف کر دیا ہے۔اس نئے سسٹم کی بدولت تاجر ملک بھر میں قائم بارڈر سٹیشنز اور بندر گاہوں  پر کسٹمز وی بوک کے ذریعے درآمدی ڈیوٹیز اور ٹیکسز کی الیکٹرانک طریقہ سے ادائیگی کر سکتے ہیں اور ٹیکس گزار گھر بیٹھے قابل ادا انکم ٹیکس، سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ادا کر سکتے ہیں۔الیکٹرانک پے (بقیہ نمبر60صفحہ10پر)

منٹ نظام کے ذریعے کسی بھی وقت تاجر اور ٹیکس گزار آن لائن طریقہ سے کسٹمز ڈیوٹیز اور ایف بی آر کے دیگر ٹیکسز بشمول صوبائی ٹیکسز اور سٹیمپ ڈیوٹی ادا کرسکتے ہیں۔ یہ سہولت  انٹرنیٹ اور موبائل بینکنگ کے ذریعے دستیاب ہے۔ ٹیکسز اور ڈیوٹیز کی ادائیگی ملک بھر میں پھیلے ہوئے 16000 کمرشل بینکوں کی 15000 اے ٹی ایم مشینوں کے ذریعے کی جا سکتی ہے۔ٹیکس گزاروں کا ٹیکسز اور ڈیوٹیز کی  الیکٹرانک ادائیگی کے رحجان اور اعتماد میں بہتری آئی ہے جس کا ثبوت یہ ہے کہ انکم ٹیکس، سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی الیکٹرانک طریقہ سے ادائیگی  کا تناسب پچھلے سال جولائی تا دسمبر 2019 کے 6.26 فیصد سے بڑھ کر اس سال اسی عرصہ میں 40.5 فیصد ہو گیا ہے۔ اسی طرح الیکٹرانک طریقہ سے حاصل کردہ ٹیکسز کا تناسب 13.55 فیصد سے بڑھ کر 76.5 فیصد ہو گیا ہے۔الیکٹرانک طریقہ سے ٹیکسز اور ڈیوٹیز کی ادائیگی کی اس سہولت سے تاجر اور دوسرے ٹیکس گزار کرونا وبا کے دوران مستفید ہوئے۔ پاکستان کسٹمز نے کل درآمدی ڈیوٹیز کا 18.6 فیصد الیکٹرانک ادائیگی کی صورت میں حاصل کیا ہے۔ پچھلے چھ ماہ میں وی بوک سے کلیئر شدہ 80000کنسائینمنٹس جو کہ کل درآمدات کا 22 فیصد ہیں ان پر عائد ڈیوٹیز الیکٹرانک طریقہ کار کے ذریعہ حاصل ہوئی ہیں۔ بڑے کسٹمز سٹیشنز جیسے لاہور، کراچی، اسلام آباد اور پشاور کے علاوہ درآمدکنندگان نے ا س سہولت سے دوردراز کے علاقوں جیسے تفتان اور خنجراب میں بھی فائدہ اٹھایا ہے۔ایف بی آر نے تاجران اور ٹیکس گزاروں کو ترغیب دی ہے کہ وہ ٹیکس ادائیگی کے الیکٹرانک طریقہ کار کو ترجیح دے کراپنی کاروباری لاگت کو کم کریں کیونکہ اس طریقہ کارسے تجارتی آسانی فراہم کرنے میں بہتری آئی ہے۔نہ صرف اس طریقہ کار سے اشیا کی تیزی سے کلئیرنس ممکن ہو پاتی ہے بلکہ ٹیکسز اور ڈیوٹیز کی ادائیگی میں بھی شفافیت برقرار رہتی ہے۔ عالمی تجارتی تنظیم تجارتی سہولتی معاہدہ کے تحت الیکٹرانک طریقہ کار  سے ٹیکسز اور ڈیوٹیز کی ادائیگی کو فروغ دینے پر اصرار کرتی ہے۔اس سہولت کی تشہیر کے لئے ایف بی آر نے حال ہی میں میڈیا کیمپین چلائی ہے اور سیمینارز کا انعقاد کیا ہے۔ایف بی آر کی وی بوک ہیلپ لائن تاجروں کو ای پے منٹ سے متعلقہ سوالات اور مسائل کو حل کرنے میں معاونت فراہم کر رہی ہے۔تاجر وی بوک پیج پر اکثر پوچھے گئے سوالات کے سیکشن میں جا کر اس طریقہ کار کے متعلق مزید جان سکتے ہیں۔

تیزی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -