عوام کو ساڑھے 8ارب کا ٹیکہ لگانے کی تیاری، بجلی 1.06روپے فی یونٹ مہنگی، پی پی کا احتجاج قیمتوں میں اضافہ مسترد

عوام کو ساڑھے 8ارب کا ٹیکہ لگانے کی تیاری، بجلی 1.06روپے فی یونٹ مہنگی، پی پی کا ...

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں)نیپرا نے فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی ایک روپیہ 6پیسے فی یونٹ مہنگی کرنے کی اجازت دیدی۔ پیر کو نیپرا نے فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی مہنگی کرنے کا نوٹیفیکیشن جاری کردیاجس کے مطابق سی پی پی اے جی نے 1 روپے 52 پیسے فی یونٹ اضافے کی درخواست کی تھی، اتھارٹی نے 30 دسمبر 2020 کو دونوں مہینوں کی ایف سی اے پر عوامی سماعت کی تھی،نیپرا نے اکتوبر اور نومبر کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں سماعت کی تھی،اتھارٹی نے  سماعت مکمل ہونے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا تھا،اس کا اطلاق صرف جنوری کے مہینے کے بلوں پر ہوگا،صارفین سے 8 ارب 50 کروڑ روپے مزید وصول کیے جائیں گے، اکتوبر کیلئے 29 پیسے اور نومبر کیلئے 77 پیسے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی گئی،اس کا اطلاق ڈسکوز کے تمام صارفین ماسوائے لائف لائن صارفین پر ہوگا، فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کا اطلاق کے الیکٹرک صارفین پر بھی نہیں ہوگا۔دوسری جانب پیپلزپارٹی کے سیکریٹری جنرل نیئر حسین بخاری نے اپنے بیان میں کہاکہ پیپلزپارٹی بجلی کی قیمتوں میں اضافے سے متعلق فیصلے کو مسترد کرتی ہے، حکومت عوام دشمن فیصلے کر عوام کا جینا مشکل بنا دیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بجلی کی قیمتوں کا برائے راست اثر غریب طقبے پر پڑے گا، بجلی کے بریک ڈاون کے بعد بجلی مہنگی کرنا قابل مذمت ہے، وفاقی حکومت اپنی نااہلی اور ناکامی کا بوجھ عوام پر ڈالنا بند کرے۔ انہوں نے کہاکہ بجلی کے بدترین بریک ڈاون کے ذمہ داران کے خلاف کارروائی ہوتی تو آج بجلی مہنگی نہ ہوتی، وفاقی حکومت بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ فوری واپس لے۔

بجلی مہنگی

مزید :

صفحہ اول -