ایرانی اور پاکستانی جوڑے کی ناراضی چھ سالہ بچے کے لئے امتحان بن گئی

ایرانی اور پاکستانی جوڑے کی ناراضی چھ سالہ بچے کے لئے امتحان بن گئی
ایرانی اور پاکستانی جوڑے کی ناراضی چھ سالہ بچے کے لئے امتحان بن گئی

  

کراچی (ویب ڈیسک)ایرانی اور پاکستانی جوڑے کی ناراضی چھ سالہ بچے کے لیے امتحان بن گئی، والدین کے وکلا کی تکرار کے باعث جسٹس محمد سلیم جیسر نے درخواست سننے سے انکار کردیا۔ پیر کو جسٹس محمد سلیم جیسر پر مشتمل سنگل بنچ نے بچے کی حوالگی کے لیے ایرانی خاتون آزادی سرداری کی درخواست کی سماعت کی۔

سماعت کے موقع پر درخواست گزار کے وکیل ضیا  اعوان نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ان کی موکلہ آزادی سرداری اور نعمان خان کی شادی سات سال قبل متحدہ عرب امارات میں میں ہوئی تھی اور دونوں میاں بیوی 2019 میں کراچی منتقل ہوئے جبکہ ان کی موکلہ پاکستان میں رہنے کو تیار نہیں اور ان کی موکلہ چھ ماہ بعد ایران سے واپس آئی ہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -