درجنوں خوبرو خواتین کے جھرمٹ میں بیٹھ کر اسلامی تقریر کرنے والا بالآخر پکڑا گیا، 1000 سال قید کی سزا

درجنوں خوبرو خواتین کے جھرمٹ میں بیٹھ کر اسلامی تقریر کرنے والا بالآخر پکڑا ...
درجنوں خوبرو خواتین کے جھرمٹ میں بیٹھ کر اسلامی تقریر کرنے والا بالآخر پکڑا گیا، 1000 سال قید کی سزا

  

انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی میں درجنوں خوبرو خواتین کے جلو میں اسلامی تقاریر کرنے والے جنسی فرقے کے لیڈر کو 1ہزار 45سال قید سنا کر جیل بھجوا دیا گیا۔ میل آن لائن کے مطابق اس آدمی کا نام عدنان اوکتر تھا جس نے ایک ایسا فرقہ بنا رکھا تھا جس کی تعلیمات کا محور جنسیت تھا۔ مجرم ہمہ وقت خوبصورت لڑکیوں کے جھرمٹ میں رہتا اور اسی حالت میں ہی مذہبی تقاریر کرتا تھا۔

اس آدمی نے اپنا ایک آن لائن چینل بھی بنا رکھا تھا جس پر رقص و سرود کی محفلیں ہوتیں اور یہ شخص جنسیت کا پرچار کرتا تھا۔ اسی چینل پر اس 64سالہ آدمی نے دعویٰ کیا تھا کہ اس کی 1ہزار گرل فرینڈز ہیں اور اس کے گھر میں 69ہزار مانع حمل گولیاں پڑی ہیں۔پولیس نے اسے گرفتار کرکے اس کے خلاف جنسی زیادتی، بچوں کے جنسی استحصال، جاسوسی، بلیک میلنگ اور جرائم پیشہ گینگ چلانے جیسے الزامات کے تحت مقدمہ درج کرکے عدالت میں پیش کیا جہاں اس کے جرائم ثابت ہونے پر اسے 1ہزار 45سال قید کی سزا سنا دی گئی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -