داعش کا عرب ریاست میں تباہی مچانے کا منصوبہ ناکام، بڑی تباہی ٹل گئی

داعش کا عرب ریاست میں تباہی مچانے کا منصوبہ ناکام، بڑی تباہی ٹل گئی
داعش کا عرب ریاست میں تباہی مچانے کا منصوبہ ناکام، بڑی تباہی ٹل گئی

  

تیونس (مانیٹرنگ ڈیسک) تیونس کے دارالحکومت میں سیاحوں پر خوفناک حملے کی گرد ابھی بیٹھی نہ تھی کہ داعش کے جنگجو ایک اور بڑے حملے کیلئے پہنچ گئے، لیکن خوش قسمتی سے حملے کیلئے آنے والے پانچوں شدت پسندوں کو سیکیورٹی اہلکاروں نے ٹھکانے لگادیا۔

برطانوی میڈیا کے مطابق تیونس کی سپیشل فورس داعش کے آٹھ شدت پسندوں کا تعاقب کررہی تھی اور ان میں سے پانچ کو الکتار قصبے کے قریب ہلاک کردیا گیا۔ تیونسیا کے حکام کو اس سے پہلے خبردار کیا گیا تھا کہ سیاحوں پر ایک اور بڑا حملہ ہونے والا ہے جس کے بعد سیکیورٹی ادارے ممکنہ دہشت گردوں کی تلاش میں تھے۔ اخبار ’’دی مرر‘‘ کے مطابق دہشت گرد ایک بار پھر گزشتہ حملے جیسی کارروائی کرنا چاہ رہے تھے کہ سپیشل فورسز نے بروقت کارروائی کرتے ہوئے ان میں سے پانچ کو ہلاک کردیا جبکہ تین فرار ہوگئے جن کی تلاش جاری ہے۔

دو ہفتے قبل تیونسیا کے شہر سوسہ میں دہشت گردی کا ایک بڑا واقعہ پیش آیا تھا جس میں 38 سیاحوں کو ہلاک کردیا گیا تھا۔ ہلاک شدگان میں سے 30 کا تعلق برطانیہ سے تھا۔ اس حملے کی ذمہ داری داعش نے قبول کی تھی۔

مزید : بین الاقوامی