ساؤتھ افریقہ پاکستان کمیونٹی کا نام فیس بک کمیونٹی ہونا چاہئے ، چودھری لطیف

ساؤتھ افریقہ پاکستان کمیونٹی کا نام فیس بک کمیونٹی ہونا چاہئے ، چودھری لطیف
 ساؤتھ افریقہ پاکستان کمیونٹی کا نام فیس بک کمیونٹی ہونا چاہئے ، چودھری لطیف

 جوہانسبرگ(ندیم شبیر سے) حال ہی میں بننے والی ساؤتھ افریقہ پاکستان کمیونٹی کا نام فیس بک کمیونٹی ہونا چاہئیے کیوں کہ یہ لوگ صرف فیس بک وغیرہ کی حد تک ہی سرگرم ہیں ساری میٹنگیں اور سارے پلان صرف سوشل میڈیا تک ہی یہ لوگ رکھتے ہیں پریٹوریا نارتھ فری مارکیٹ سے ساؤتھ افریقہ کے مشہور معروف بزنس مین اور سماجی رہنما چوہدری لطیف ڈوئیاں نے بیوروچیف روزنامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے ان باتوں کا اظہار خیال کیا۔انہوں نے گزشتہ روز جنوبی افریقہ میں مختلف جگہوں پر قتل اور زخمی ہونے والے پاکستانیوں کے واقعے پر شدید غم و غصے کا اظہار کیا ۔انہوں نے جنوبی افریقہ میں پہلے ہی دن آنے والے سیالکوٹ کے سلمان خان جو کہ ملیریا کی وجہ سے ہسپتال میں فوت ہو گیا تھااس کی فوتگی پر بھی اظہار افسوس کیااور کہا کہ ہم نے اس کے بارے میں پاکستان ساؤتھ افریقہ کمیونٹی کے سینئر نائب صدر امانت علی تارڑ سے سلمان کی میت پاکستان بھیجنے کیلئے کہا تو انہوں نے کہا کہ ہمیں لوگ فنڈز نہیں دیتے اور نہ ہی ہمیں ممبر شپ فیس دیتے ہیں اس لیے ہمارے پاس فنڈز نہیں ہیں لیکن ہم اس لڑکے کے ایمبیسی سے پیسے بنوا سکتے ہیں اور کچھ نہیں کر سکتے، چوہدری لطیف نے مزید کہا کہ یہ تنظیم صرف فوٹو سیشن بنوانے کیلئے بنی ہے یا پھر وٹس اپ پر شور مچانے کیلئے انہوں نے کہا کہ کمیونٹی کی طرف سے کوئی بندہ اس واقعے کے بارے میں پوچھنے نہیں گیا آخر کیوں؟دو پاکستانی قتل ہو گئے اور ہسپتال میں ICU میں سیریس ہیں لطیف ڈوئیاں نے کہا کہ اس کمیونٹی سے پہلے بھی بننے والی کمیونٹیاں ہم سے فنڈز لیتی رہی ہیں اور اس دفعہ بھی ہم کچھ دوستوں نے 5000 رینڈز دینے کا اعلان کیا تھا لیکن ان لوگوں کی کارکردگی دیکھ کر کوئی کیا ان کو فنڈز دے گا؟ پتہ نہیں یہ کمیونٹی کس مقصد کیلئے بنائی گئی ہے کیونکہ اگر یہ مشکل وقت میں کسی پاکستانی کی مدد نہیں کر سکتی تو پھر کیا فائدہ ہائی کمیشن کے راستے کا ہر پاکستانی کوعلم ہے لیکن اس کمیونٹی نے آج تک کون سا کام کیا ہے اگر سوشل میڈیا پر دیکھو تو تو ایسے لگتا ہے کہ ہائی کمیشن تو بس برائے نام ہے سارا کام تو یہ کمیونٹی والے کرتے ہیں۔چوہدری لطیف نے مزید کہا کہ ہائی کمشنر نجم الثاقب سے ہمارا مطالبہ ہے کہ اس فیس بک اور وٹس اپ پر چلنے والی کمیونٹی کو پوچھا جائے کہ انہوں نے اس معاملے میں کیا کیا ہے؟ یا پھر معمول کی طرح فوٹو بنوائی اور اپ لوڈ کر دیں۔سوشل میڈیا پر یہ لوگ اس طرح لوگوں کو دکھاتے ہیں جیسے ساؤتھ افریقہ ہی ان کے سر پر چل رہا ہو اور اس کمیونٹی کا نام ساؤتھ افریقہ کمیونٹی سے بدل کر فیس بک کمیونٹی ہونا چاہئیے۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...