تین سالہ بچی کے حصول کیلئے سابق شوہر،والدہ او ر دادی کے مابین کھینچا تانی

تین سالہ بچی کے حصول کیلئے سابق شوہر،والدہ او ر دادی کے مابین کھینچا تانی

لاہور(نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج نسیم احمد ورک کی عدالت میں 3سالہ مہرالنساء کے حصول کے لئے والدہ، دادی اور سابق شوہرکے درمیان کھینچا تانی اور جھگڑا ہوتا رہا،عدالت نے بچی کو باپ کے حوالے کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت کے باہر نانی اور دادی کے درمیان ہاتھ پائی بھی ہوئی لیکن سیکورٹی اہلکار بچی اورباپ کو اپنی حفاظت میں باہر لے گئے۔ایڈیشنل سیشن جج نسیم احمد ورک کی عدالت مین 3سالہ مہرالنساء کی والدہ آسیہ نے بچی کے حصول کے لئے درخواست دائر کی کہ اس کے سابق شوہر فیروز نے اس کی بیٹی کو ناجائز رکھا ہوا ہے، بچی کو اس کے حوالے کیا جائے۔ عدالت نے پولیس کی مدد سے بچی کو برآمد کیا۔ بچی کی والدہ آسیہ، نانی اور دیگر رشتہ داروں نے بچی کو باپ کی گود سے چھیننے کی کوشش کی۔ تلخ کلامی کے بعدنوبت ہاتھا پائی تک پہنچ گئی۔ عدالت میں فیروز کے وکیل نے بتایا کہ بچی کو گارڈین عدالت نے اس وجہ سے باپ کو دیا تھا کہ ماں دوسری شادی کرچکی ہے اور اس کے دوسرے شوہر سے بھی بچے ہیں۔

عدالت نے گارڈین کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں بچی کو باپ کے پاس ہی رہنے کا حکم دیتے ہوئے آسیہ کو گارڈین کورٹ سے رجوع کرنے کی ہدایت کی ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4