آزادی پسند رہنماؤں کا سردار عبدالقیوم خان کی وفات پر اظہار رنج و غم

آزادی پسند رہنماؤں کا سردار عبدالقیوم خان کی وفات پر اظہار رنج و غم

سرینگر (اے پی پی) مقبوضہ کشمیر میں بزرگ کشمیری حریت رہنما سید علی گیلانی ، کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق ، جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک اور دیگر نے آزادکشمیر کے سابق صدر اور وزیر اعظم سردار محمد عبدالقیوم خان کی وفات پر انتہائی رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کو شاندار خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق سیدعلی گیلانی نے سرینگر میں ایک بیان میں کہا کہ سردار عبدالقیوم خان مسئلہ کشمیر کے حوالے سے بذات خود ایک تاریخ کی حیثیت رکھتے تھے اور کشمیریوں کی جدوجہدِ آزادی کے نشیب وفراز اور اونچ نیچ سے وہ اچھی طرح واقف تھے۔ میرواعظ عمر فاروق نے اپنے بیان میں تحریک آزادی کشمیر کے حوالے سے مرحوم کی گراں قدر خدمات اور قربانیوں کو ناقابل فراموش قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ سردارعبدالقیوم نے میرواعظ مولانا محمد یوسف شاہ مرحوم کے ساتھ ملکر کشمیر کی بھارتی تسلط سے آزادی کیلئے بھر پور کردار ادا کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم مسئلہ کشمیر کے حل کے حوالے سے پوری زندگی سرگرم عمل رہے اور مقامی اور بین الاقوامی سطح پراس مسئلے کو اجاگر کرنے کے لیے گراں قدر خدمات انجام دیں جوتحریک آزادی کشمیر کا ایک زریں باب ہے۔ میرواعظ نے نماز جمعہ کے بعد مرحوم رہنما کی غائبانہ نماز جنازہ بھی پڑھائی۔ محمد یاسین ملک نے سرینگر میں جاری بیان میں سردار عبدالقیوم خان کو ایک قدآور سیاسی شخصیت اور زیرک سیاستدان قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ ایک شفیق انسان تھے جن کی کمی ہمیشہ محسوس کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم تنازعہ کشمیر کے حل کے لیے ساری زندگی کوششیں کرتے رہے اور آخر وقت تک اس عظیم مشن کے ساتھ وابستہ رہے۔پیپلز پولیٹکل فرنٹ کے سرپرست فضل الحق قریشی اور چیئرمین محمد مصدق نے ایک مشترکہ بیان میں کہا کہ سردار عبدالقیوم خان کی وفات سے کنٹرول لائن کے دونوں جانب بسنے والے کشمیری ایک تاریخ ساز سیاسی رہنما سے محروم ہو گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تحریک آزادی کے حوالے سے مرحوم کی خدمات ہمیشہ یاد رکھی جائیں گی۔حریت رہنما نعیم احمد خان نے اپنے بیان میں کہا کہ کشمیری تحریک آزادی کے حوالے سے مرحوم رہنما کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مرحوم ساری عمرکشمیریوں کے جذبات اور امنگوں کی بھر پور ترجمانی کرتے رہے۔ حریت رہنماؤں مولانا عباس انصاری، محمد یوسف نقاش ،حکیم عبد الرشید ، سیدسلیم گیلانی اور محمد رمضان خان نے بھی اپنے بیانات میں مرحوم کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے تحریک آزادی کے حوالے سے ان کی خدمات کو ناقابل فراموش قرار دیا۔دریں اثنامتحدہ جہا کونسل کے چیئرمین اور حزب المجاہدین کے امیر سید صلاح الدین نے بھی ایک بیان میں سردار محمد عبدالقیوم خان کی وفات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ تحریک آزادی کے حوالے سے مرحوم کی خدمات کو تاریخ میں سنہری حروف سے لکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ موصوف اپنی زندگی میں جموں و کشمیر کو بھارتی تسلط سے آزاد ہوتے ہوئے دیکھنے کے متمنی تھے لیکن انکی یہ آرزو پوری نہ ہو سکی۔ سید صلاح الدین نے کہا کہ مرحوم نے آزاد جموں و کشمیر کے سیاسی استحکام اور معاشی و اقتصادی ترقی میں بھی کلیدی کردار ادا کیا ہے۔ سید علی گیلانی کی سرپرستی میں قائم فورم کی آزادکشمیر شاخ کے کنوینر غلام محمد صفی، ڈیموکریٹک فریڈم پارٹی کے نائب صدر محمود احمد ساغر اور جموں وکشمیر نیشنل فرنٹ کے رہنما محمد الطاف وانی نے بھی اپنے بیانات میں تحریک آزادی کشمیر کے علاوہ مرحوم کی سیاسی اور سماجی خدمات کو ناقابل فراموش قرار دیا۔

 

مزید : عالمی منظر