کارکنوں کے ساتھ ظالمانہ سلوک بند کرایا جائے، ایم کیو ایم

کارکنوں کے ساتھ ظالمانہ سلوک بند کرایا جائے، ایم کیو ایم

کراچی(اسٹا ف رپورٹر)متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی نے جیل میں حراست کے دوران ایم کیوایم کے کارکنان کے ساتھ روا رکھے جانے والے غیرانسانی سلوک کی سخت ترین الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ جیل میں بے گناہ کارکنوں کے ساتھ ظالمانہ طرزعمل کا سلسلہ بند کرایا جائے ۔ ایک بیان میں رابطہ کمیٹی نے کہاکہ ایم کیوایم کے جن کارکنان کو 90 روز کے ریمانڈ پر جیل بھیجاگیاہے انہیں ہتھکڑی اور بیڑیاں ڈال کر 24 گھنٹے سیلوں میں بند رکھاجارہا ہے اور پانچ منٹ کیلئے بھی چہل قدمی کی اجازت نہیں دی جارہی ہے ، ان میں سے بہت سے اسیران بہیمانہ تشدد کے بعد جیلوں میں بھیجے گئے ہیں اور انہیں علاج کے ساتھ ساتھ مسلسل جسمانی ورزش کی سخت ضرورت ہے لیکن انہیں مسلسل لاک اپ میں قید رکھاجارہا ہے ۔۔ جیل میں اسیرکارکنوں کو نہ صر ف ذہنی کرب واذیت میں مبتلا کیاجارہا ہے بلکہ ان پر بہیمانہ تشدد بھی کیاجارہا ہے جس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے ۔ رابطہ کمیٹی نے کہاکہ اگر جیل انتظامیہ ایم کیوایم کے اسیرکارکنوں پر غیرانسانی مظالم بند نہیں کرے گی تو پھر ایم کیوایم کی جانب سے جیل کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیاجائے گا۔ رابطہ کمیٹی نے وزیراعظم پاکستان محمدنواز شریف، وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثارعلی خان اور وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ سے مطالبہ کیا کہ وہ کراچی سینٹرل جیل سمیت تمام سرکاری عقوبت خانوں کا دورہ کرکے اپنے طورپر معلوم کریں کہ ایم کیوایم کے کارکنوں کوحراست میں کس قدر غیرانسانی سلوک کا نشانہ بنایاجارہا ہے ، اسیرکارکنوں پر مظالم کا سلسلہ بند کرائیں اور تمام اسیروں کا فوری طورپر طبی معائنہ کراکر انہیں علاج ومعالجہ کی سہولیات فراہم کی جائیں ۔رابطہ کمیٹی نے خاص طورپر سپریم کورٹ اور سند ھ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس صاحبان سے بھی مطالبہ کیا کہ وہ سینٹرل جیل اور دیگر سرکاری عقوبت خانوں کا غیراعلانیہ دورہ کرکے وہاں قید اسیران کی حالت زارکا خود مشاہدہ کریں اورقیدیوں کے ساتھ روا رکھے جانے والے غیرانسانی سلوک کا خاتمہ کرائی

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...