بھارت سے مذاکرات کیلئے اتفاق رائے کی پالیسی اختیار کی جائے،لیاقت بلوچ

بھارت سے مذاکرات کیلئے اتفاق رائے کی پالیسی اختیار کی جائے،لیاقت بلوچ

لاہور( نمائندہ خصوصی)قائم مقام امیر جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے اسلام آباد میں سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری،ایران کے سفیراور مولانا فضل الرحمن سے ملاقات کی اورجماعت اسلامی پاکستان کے نائب امیر پروفیسر خورشید احمد کے ساتھ ملاقات میں تبادلہ خیال کیا۔لیاقت بلوچ نے کہا کہ نواز مودی ملاقات موجودہ حالات کے تناظر میں اہم ہے لیکن بھارت اپنی ہٹ دھرمی پر قائم ہے،ملاقات اور مذاکرات اپنے ایجنڈے پر ہی رکھنا چاہتا ہے۔ یہ رویہ مذاکرات یا کسی ڈپلومیسی کو کامیاب نہیں ہونے دے گا۔ کشمیریوں کے حق خودارادیت کے لیے نریندر مودی سے صاف بات کی جاتی۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان نے تو کشمیری رہنماؤں کا افطار ڈنر منسوخ کر دیا لیکن بھارت کشمیر پر بات کرنے کے لیے تیار نہیں اور نہ ہی نریندر مودی بھارتی جارحانہ حکمت عملی کو ختم کریں گے۔ اب وقت آگیا ہے کہ دہشت گردی کے خاتمہ ،پاک چائنہ اکنامک کاریڈور کی طرح بھار ت سے تعلقات ،مذاکرات اور علاقائی مسائل کے حل کے لیے قومی اتفاق رائے کی پالیسی اختیار کی جائے۔

لیاقت بلوچ

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...