خیبر پختونخوا کے گرفتار وزیر ضیائاللہ آفریدی ہسپتال منتقل وارڈ کی سیکورٹی سخت

خیبر پختونخوا کے گرفتار وزیر ضیائاللہ آفریدی ہسپتال منتقل وارڈ کی سیکورٹی ...

 پشاور(اے این این) احتساب کمیشن کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے صوبائی وزیر ضیاء اللہ آفریدی کو ہسپتال منتقل کر دیا گیا،حیات میڈیکل کمپلکس کی سکیورٹی سخت کر دی گئی،مخصوص وارڈ میں کسی کو داخلے کی اجازت نہیں۔ذرائع کے مطابق میگا کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال کے الزام میں صوبائی احتساب کمیشن کے ہاتھوں گرفتار ہونے والے خیبرپختون خواہ کے وزیر معدنیات ضیاء اللہ آفریدی کو ریمانڈ پورا ہونے سے قبل ہی حیات آباد میڈیکل کمپلیکس منتقل کر دیا گیا ہے جہاں انھیں خصوصی وارڈ میں رکھا گیا ہے جس میں کسی کو جانے کی اجازت نہیں ہے۔آفریدی کی منتقلی کے بعد ہسپتال کی سکیورٹی بھی بڑھا دی گئی ہے۔تحریک انصاف کے ذرائع اور ضیاء اللہ کے قریبی حلقوں کا موقف ہے کہ دوران تفتیش صوبائی وزیر کی صحت خراب ہو گئی تھی ان کا بلڈ پریشر ہائی ہو گیا تھا اور سانس لینے میں بھی دشواری کا سامنا تھا اس لئے انھیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے اور ان کا علاج کیا جا رہا ہے۔واضح رہے کہ ناجائز اثاثے بنانے،غیر قانونی بھرتیوں اور ٹھیکے من پسند افراد کو دینے کے الزام میں گرفتار صوبائی وزیر معدنیات ضیا اللہ آفریدی کو گزشتہ روز صوبائی احتساب کمیشن کے جج نے تیرہ روزہ ریمانڈ پر احتساب کمیشن کے حوالے کیا تھا ۔

ضیاء اللہ آفریدی

مزید : صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...