افغان حکومت‘ طالبان مذاکرات علاقائی استحکام کیلئے اہم پیشرفت‘ پاکستان کا کردار قابل تعریف ہے: سلامتی کونسل

افغان حکومت‘ طالبان مذاکرات علاقائی استحکام کیلئے اہم پیشرفت‘ پاکستان کا ...
افغان حکومت‘ طالبان مذاکرات علاقائی استحکام کیلئے اہم پیشرفت‘ پاکستان کا کردار قابل تعریف ہے: سلامتی کونسل

نیویارک/ کابل (اے این این ) اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل نے افغان حکومت اور طالبان کے درمیان براہ راست مذاکرات میں پاکستان کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ افغان امن عمل میں خواتین کے کردار کو بھی نظرانداز نہیں کیا جاسکتا۔ مذاکرات میں امریکہ اور چین نے بھی تعمیری کردار ادا کیا ہے۔ اقوام متحدہ کی 15رکنی سلامتی کونسل کی طرف سے جاری بیان میں پاکستان کے سیاحتی مقام مری میں افغان حکومت اور طالبان کے درمیان براہ راست مذاکرات کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ یہ قدم افغان امن عمل اور خطے میں امن و استحکام کے حوالے سے اہم پیشرفت ہے۔ مذاکرات کی میزبانی کر کے پاکستان نے اہم کردار ادا کیا ہے۔ امریکہ، چین اور دیگر ممالک نے بھی تعمیری کردار ادا کیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ افغان امن عمل میں خواتین کے کردار کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا جیسا کہ سلامتی کونسل کی قرارداد 1325 اور دیگر متعلقہ قرار دادوں میں عالمی برادری نے تسلیم کر رکھا ہے۔ افغان امن عمل کے تمام مراحل میں خواتین کو مکمل، مساوی اور موثر کردار دینے کی ضرورت ہے۔ بیان کے مطابق سلامتی کونسل کے تمام ارکان نے افغانستان میں امن، مفاہمت، جمہوریت اور ترقی کیلئے مکمل حمایت کا اعادہ کیا ہے۔ ادھر افغانستان کے صدر محمد اشرف غنی نے کہاہے کہ طالبان کے ساتھ آئندہ مذاکرات میں اعتماد سازی اور بڑے مطالبات زیر بحث آئیں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کے روز سیاسی ماہرین، تجزیہ کاروں اور صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اشرف غنی نے کہاکہ امن عمل قیادت اور افغانستان کیلئے قابل قبول ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہاکہ مذاکرات میں خواتین کو بھی شامل کیا جائیگا۔ افغان صدر نے کہا کہ ڈیورنڈ لائن پر بات چیت ان مذاکرات کا حصہ نہیں ہوگی۔ افغانستان میں امن عمل پورے خطے کیلئے فائدہ مند ہوگا۔

مزید : بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...