نہانے کےلیے پانی گرم ہونا چاہیئے یا ٹھنڈا؟سائنس نے حتمی فیصلہ دے دیا

نہانے کےلیے پانی گرم ہونا چاہیئے یا ٹھنڈا؟سائنس نے حتمی فیصلہ دے دیا
نہانے کےلیے پانی گرم ہونا چاہیئے یا ٹھنڈا؟سائنس نے حتمی فیصلہ دے دیا

برمنگھم (نیوز ڈیسک) اکثر لوگ ٹھنڈے پانی سے نہانے کا سوچ کر ہی کانپ اٹھتے ہیں لیکن اگر انہیں ٹھنڈے پانی سے نہانے کے فوائد کا پتہ چل جائے تو یہ کبھی بھی گرم پانی سے نہ نہائیں۔

٭ ٹھنڈے پانی سے نہانے سے جسم کے پٹھے مضبوط ہوجاتے ہیں اور اعضاءکو طاقت ملتی ہے، خصوصاً مردوں کیلئے ٹھنڈے پانی سے نہانا بہت فائدہ مند ثابت ہوتا ہے۔

٭ جب جسم پر ٹھنڈا پانی پڑتا ہے تو براﺅن چربی سرگرم عمل ہوجاتی ہے اور جسم کو گرم رکھنے کیلئے سفید چربی اور حراروں کو جلاتی ہے۔ ایک سکینڈے نیوین تحقیق کے مطابق روزانہ ٹھنڈے پانی سے نہانا اگر ایک سال تک جاری رکھا جائے تو وزن میں تقریباً 4 کلو گرام کمی ہوجاتی ہے اور موٹاپے کی بیماری نہیں ہوتی۔

٭ آپ نے اکثر دیکھا ہوگا کہ کھلاڑی کھیل کے دوران چوٹ کی صورت میں برف کا استعمال کرتے ہیں۔ آپ بھی اگر سخت ورزش یا مشقت کے بعد ٹھنڈے پانی سے نہائیں تو چوٹوں کے نقصانات اور دردوں سے محفوظ رہیں گے۔

٭ صبح اٹھ کر ٹھنڈے پانی سے نہانے سے دل کی دھڑکن تیز ہوجاتی ہے اور جسم میں زیادہ آکسیجن جاتی ہے اور یوں آپ سارے دن کے لئے چاق و چوبند ہوجاتے ہیں۔

٭ ٹھنڈے پانی سے نہانے سے میٹا بولزم تیز ہوجاتا ہے اور خون کے سفید خلیوں کی افزائش بڑھ جاتی ہے جس کے نتیجہ میں قوت مدافعت میں اضافہ ہوتا ہے اور بیماریوں سے تحفظ ملتا ہے۔

٭ دلکش جلد اور ملائم بالوں کیلئے بھی ٹھنڈے پانی سے نہانا نہایت مفید ثابت ہوتا ہے۔ گرم پانی جلد اور بالوں کو خشک اور کھردرا کردیتا ہے جبکہ ٹھنڈے پانی سے بال ملائم اور صحتمند رہتے ہیں اور سر کی جلد کے مسام مٹی اور گرد جذب نہیں کرتے۔ ٹھنڈے پانی سے جلد میں ملائم اور جوان ہوجاتی ہے اور عمر کے ساتھ ڈھیلے پن کا شکار نہیں ہوتی۔

مزید : تعلیم و صحت

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...