ایپکس کمیٹی کا اجلاس،مدارس کی سکرونٹی رپورٹ پیش

ایپکس کمیٹی کا اجلاس،مدارس کی سکرونٹی رپورٹ پیش
ایپکس کمیٹی کا اجلاس،مدارس کی سکرونٹی رپورٹ پیش

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیر اعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کی زیر صدارت ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا جس دوران کراچی کو دہشتگردی سے پاک کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے اور دوران اجلاس سندھ میں مدارس کی سکرونٹی رپورٹ پیش کر دی گئی ہے جس میں سندھ میں 40سے زائد مدارس دہشتگردی کیلئے استعمال ہونے کا انکشاف ہو اہے ۔

تفصیلات کے مطابق قائم علی شاہ کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو،صوبائی وزیر داخلہ ،کور کمانڈر کراچی ،ڈی جی رینجرز سندھ سمیت صوبائی قیادت نے شرکت کی ،جس دوران سیکریٹری داخلہ نے نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے کمیٹی کو بریف کیا لیکن نیشنل ایکشن پلان پر عملد رآمد موثر طورپر نہ ہونے پر کمیٹی کی جانب سے تحفظات کا اظہار کیا گیا ۔

اجلاس میں ڈی جی رینجرزنے بھی کراچی میں جاری ٹارگٹ آپریشن کے حوالے سے کمیٹی کو بریفنگ دی اور ڈیریکٹر ایف آئی اے شاہد حیات نے بھی کمیٹی کو کارروائیوں پر مکمل تفصیلی بریفنگ دی ۔

مدارس کی سکرونٹی رپورٹ میں کہا گیاہے کہ دہشتگردی میں استعمال ہونے والے مدارس میں سے 24کراچی کے ہیں جبکہ 20دیگر دوسرے شہروں کے ہیں ۔رپورٹ میں کہا گیاہے کہ سندھ میں ساڑھے نوہزار سے زائد مدارس ہیں جن میں 6503رجسٹرڈ ہوچکے ہیں جبکہ 3087مدارس کی رجسٹریشن کا عمل جاری ہے ۔رپورٹ میں بتایا گیاہے کہ اب تک غیر رجسٹرڈ 160سے زائد مدارس کو سیل کر دیا گیاہے جبکہ چھ مشکوک مدارس کی تلاشی بھی لی گئی ہے اور نگرانی کا عمل بھی جاری ہے ۔

کمیٹی کے اجلاس میں اتفاق کیا گیا کہ دہشتگردی کیخلاف آپریشن کو منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا اور کراچی کو کرائم سے پاک کیا جائے گا ۔ہنگامی بنیادوں پر اجلاس وزیراعلیٰ سندھ قائم علی شاہ کے عمرہ کی ادائیگی پر روانہ ہونے کے باعث بلایا گیا جس دوران کراچی کی مجموعی سیکیورٹی صورتحال اور کراچی میں جاری آپریشن پر کمیٹی کر بریفنگ دی گئی ۔

مزید : کراچی /اہم خبریں