مشعال خواجہ کا نیا گیت ’’تیرے بن سونا‘ ‘فلاپ،پرستاروں کو مایوسی

مشعال خواجہ کا نیا گیت ’’تیرے بن سونا‘ ‘فلاپ،پرستاروں کو مایوسی

لاہور(فلم رپورٹر)کوک اسٹوڈیو ایکسپلورر کے گانوں ’پاریک‘، ’فقیرا‘ اور ’نصیبایا‘ نے تو ریلیز ہوتے ہی خوب پذیرائی حاصل کی، لیکن اس کے چوتھے گانے ’تیرے بن سونا‘ کو سن کر مداحوں نے کسی حد تک مایوسی کا اظہار کیا ہے۔'تیرے بن سونا‘کوک اسٹوڈیو ایکسپلورر کا چوتھا گانا ہے۔لاہور سے ریلیز ہونے والے اس گانے کو نوجوان گلوکارہ مشعال خواجہ نے گایا ہے۔اس سے قبل وادی کیلاش سے ’پاریک‘، اندرون سندھ سے ’فقیرا‘ اور بلوچستان کے علاقے صحبت پور سے ’نصیبایا‘ نے ثقافت کے رنگ بکھیر کر سب کو متاثر کردیا لیکن لاہور سے ریلیز کیا گیا گانا ’تیرے بن سونا‘ مداحوں کو کچھ خاص متاثر نہ کرسکا۔اس گانے میں لاہور کی ثقافت اور پنجابی موسیقی دکھائی گئی۔

جب کہ مکمل توجہ گلوکارہ کو دی گئی ہے۔مداحوں کا کہنا ہے کہ 3 زبردست گانوں کے بعد چوتھے گانے سے بہت امیدیں تھیں لیکن ’تیرے بن سونا‘ نے یہ تسلسل توڑ دیا ہے اور یہ ایک طرح سے اس سیزن کی پہلی ناکامی ہے۔

مزید : کلچر