ان غیرمعمولی قوتوں سے لڑ رہے ہیں جنہیں مستحکم اور پر امن پاکستان برداشت نہیں،دہشتگردوں کی شکست دینگے : جنرل باجوہ ، وزیر اعظم کی صوبوں کو سیکیورٹی انتظامات بڑھانے کی ہدایت

ان غیرمعمولی قوتوں سے لڑ رہے ہیں جنہیں مستحکم اور پر امن پاکستان برداشت ...

راولپنڈی(جنرل رپورٹر، نیوز ایجنسیاں)آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اے این پی کے راہنما ہارون بلور کی شہادت پر اظہار افسوس اور تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم رکنے والے نہیں دہشت گردوں کو شکست دیں گے۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے پشاور میں ہارون بلور پر دہشتگرد حملے کی سخت مذمت کرتے ہوئے بلور خاندان اور عوامی نیشنل پارٹی سے تعزیت کا اظہار کیا ہے ۔ آرمی چیف نے کہا ہے کہ ہم دہشتگردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں اور پرامن ، مستحکم پاکستان کے لئے کوشاں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم ان غیر معمولی قوتوں کے خلاف برسرپیکار ہیں جنہیں پرامن پاکستان برداشت نہیں ۔ لیکن مسلح افواج اور پاکستانی قوم مستحکم پاکستان کے لئے کوششیں جاری رکھیں گے ۔ ہم رکنے والے نہیں۔واضح رہے کہ اے این پی راہنما ہارون بلور کے والد بشیر بلور بھی 2013 میں ایک خودکش حملے میں شہید ہو گئے تھے اور آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے 23 مارچ 2018 کو ان کی جمہوریت کے لئے قربانی پر خراج تحسین پیش کیا تھا اور ہارون بلور نے ان کے والد کی خدمات کو سراہنے پر آرمی چیف کا شکریہ ادا کیا تھا لیکن منگل کے روز ہارون بلور خود بھی اپنی انتخابی مہم کے دوران دہشتگرد حملے میں شہید ہو گئے ۔

جنرل باجوہ

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،اے پی پی) نگراں وزیراعظم جسٹس (ر) ناصر الملک نے وزارت داخلہ کو پورے ملک میں سیکورٹی انتظامات میں اضافے کے لئے صوبائی حکومتوں کو ہدایات جاری کرنے کی ہدایت کی ہے۔ یہ بات انہوں نے بدھ کو یہاں وزیراعظم آفس میں امن و امان سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ نگران وزیر داخلہ محمد اعظم خان، نگران وزیر قانون سید علی ظفر، وزیراعظم کے سیکرٹری سہیل عامر، سیکرٹری داخلہ یوسف نسیم کھوکھر، ڈائریکٹر نیشنل انٹیلی جنس بیورو احسان غنی، نیکٹا کے کو آرڈینیٹر محمد سلمان، وزیراعظم کے ایڈیشنل سیکرٹری کاظم نیاز اور دیگر اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ اجلاس میں آنے والے انتخابات کے تناظر میں پورے ملک میں امن و امان کی مجموعی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس کے دوران وزیراعظم نے وزارت داخلہ کو پورے ملک میں سیکورٹی انتظامات میں اضافے کے لئے صوبائی حکومتوں کو ہدایات جاری کرنے کی ہدایت کی۔ وزیراعظم نے مقامی انتظامیہ اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو مزید ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ وہ سیاسی قیادت سے رابطہ کرے اور انہیں حکومت کی طرف سے کئے گئے سیکورٹی انتظامات کے بارے میں آگاہ کرے اور اس معاملے میں ان سے تعاون طلب کرے تاکہ کسی ناخوشگوار واقعہ کو روکا جا سکے۔ وزیراعظم نے آنے والے انتخابات کے پر امن اور احسن انداز میں انعقاد کو یقینی بنانے کے لئے تمام صوبوں کا دورہ کرنے اور سیکورٹی انتظامات کا جائزہ لینے کا فیصلہ بھی کیا۔

مزید : صفحہ اول