کسی اتھارٹی نے معاونت نہ کی تو اس کیخلاف کارروائی ہوگی،سپریم کورٹ نے اسحاق ڈار کی واپسی کیلئے سیکرٹری داخلہ کو فوری اقدامات کی ہدایت کردی

کسی اتھارٹی نے معاونت نہ کی تو اس کیخلاف کارروائی ہوگی،سپریم کورٹ نے اسحاق ...
کسی اتھارٹی نے معاونت نہ کی تو اس کیخلاف کارروائی ہوگی،سپریم کورٹ نے اسحاق ڈار کی واپسی کیلئے سیکرٹری داخلہ کو فوری اقدامات کی ہدایت کردی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیئرمین ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس میں سپریم کورٹ نے سیکرٹری داخلہ کو اسحاق ڈار کی واپسی کیلئے فوری اقدامات کی ہدایت کردی۔سپریم کورٹ نے تمام اتھارٹیزکو سیکرٹری داخلہ کی معاونت کی ہدایت کردی، چیف جسٹس پاکستان نے کہا ہے کہ کسی اتھارٹی نے معاونت نہ کی تواس کے خلاف کارروائی ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے ایم ڈی پی ٹی وی تعیناتی کیس کی سماعت کی،سابق سیکرٹری خزانہ عدالت میں پیش ہو گئے۔

چیف جسٹس پاکستان نے استفسا رکیا کہ سیکرٹری داخلہ بتائیں اسحاق ڈارکو کیسے واپس لاناہے؟،سیکرٹری داخلہ نے کہا کہ بہت طریقوں سے پاسپورٹ منسوخ ہوسکتاہے، شوکاز نوٹس دے کر پاسپورٹ کینسل کیا جاتاہے،

چیف جسٹس ثاقب نثار نے استفسار کیا کہ اگرکوئی عدالت کے بلاوے پر نہ آئے تو کیا کرنا پڑے گا؟

سیکرٹری داخلہ نے کہا کہ پرویز مشرف کیس میں پاسپورٹ اور شناختی کارڈ منسوخ ہوچکے ہیں، چیف جسٹس نے سوال کیا کہ اعلیٰ عدلیہ کے حکم پر بھی نہ آئیں تو کیا بے بس ہوجائیں؟ ۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ کوئی طریقہ کار ہونا چاہیے کہ لوگوں کو واپس لایا جائے ، اسحاق ڈار کی واپسی کیلیے انٹرپول سے رابطہ کیا جاسکتاہے؟ ۔

چیف جسٹس نے کہا کہ ہمیں ملزم کی بیرون ملک سے وطن واپسی سے متعلق بھی قانون چاہئے،سپریم کورٹ نے کیس کی سماعت ہفتے کو دوبارہ کرنے مقرر کرنے کی ہدایت کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد