قلات میں شرعی نظام اور قاضی عدالتوں کا قیام علمائے حق کی کوششوں کے مرہون منت ہے: حافظ حسین احمد 

قلات میں شرعی نظام اور قاضی عدالتوں کا قیام علمائے حق کی کوششوں کے مرہون منت ...
قلات میں شرعی نظام اور قاضی عدالتوں کا قیام علمائے حق کی کوششوں کے مرہون منت ہے: حافظ حسین احمد 

کوئٹہ(ڈیلی پاکستان آن لائن)جمعیت علمائے اسلام کے مرکزی ترجمان اور این اے 266سے ایم ایم اے کے نامزد امیدوار حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ سابقہ ریاست قلات میں شرعی نظام اور قاضی عدالتوں کا قیام علمائے حق کی کوششوں اور کاوشوں کی مرہون منت ہے، اس کا کریڈٹ علماء کے ساتھ ساتھ ریاست کے حکمر ان اور قبائلی عمائدین کو بھی جاتا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق  اپنے حلقہ انتخاب سریاب، کیچی بیگ، برما ہوٹل اور عظیم دینی درسگاہ جامعہ امدادیہ میں عوام اساتذہ طلبہ سے خطاب کر تے ہوئےحافظ حسین احمد نے کہا کہ صوبہ بلوچستان میں آج صوبہ بلوچستان کی ترقی اورخوشحالی کے لئے مدارس سے نکلنے والے علمائے کرام کارول قابل فخر اور قابل تقلید ہے ،بلوچستان میں بسنے والے تمام اقوام اور قبائل کے مابین اخوت ،رواداری اور تنازعات کے پر امن حل اور مصالحت کے حوالے سے علماء کرام کا کردار واضح اور نمایا ں رہا ہے، علماء کرام نے مشائخ نظام ، پیران گرامی ، سادات، وکلاء اور قبائلی عمائدین کے ہمراہ ہر تنازعہ اور بحران میں ہر اول دستہ کا کردار ادا کیا ہے، ان علمائے کرام کے خلوص ،عوام کے ساتھ تعلق اور ہمدردی کی بدولت آج علماء کرام جمہوری اور پارلیمانی ایوانوں میں ان کے چھوڑے مشن کو تکمیل کے لیے کوشاں ہیں۔

مزید : الیکشن /قومی اسمبلی /علاقائی /بلوچستان /کوئٹہ

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...