پی ایم اے مظفرگڑھ کا ہنگامی اجلاس ‘ تشدد واقعات پرتشویش کا اظہار

پی ایم اے مظفرگڑھ کا ہنگامی اجلاس ‘ تشدد واقعات پرتشویش کا اظہار

 مظفر گڑھ(بیورو رپورٹ، سپیشل رپورٹر)پی ایم اے مظفر گڑھ کا ھنگامی اجلاس زیر(بقیہ نمبر32صفحہ12پر)

 صدارت ڈاکٹر یوسف نسیم لغاری جنرل سیکرٹری پی ایم اے مظفر گڑھ ٹی ایچ کیو ہسپتال علی پور منعقد ہوا جس میں ڈاکٹرز کی کثیر تعداد نے شرکت کی  شرکاء نے 40 بستر کی تعداد کے ٹی ایچ کیو ہسپتال علی پور میں آوٹ ڈور، ایمرجنسی، انڈور، آپریشن تھیٹر وغیرہ کے اعداوشمار کو سامنے رکھتے ہوئے علی پور ہسپتال کے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکل سٹاف کی خدمات کو سراہا۔ صرف ماہ جون کی کارکردگی کے مطابق 40 بستر پر مشتمل اس ہسپتال میں او پی ڈی اور ایمرجنسی کی مریضوں کی تعداد تقریبا اکتیس ہزار، داخل مریضوں کی تعداد بارہ سو کے قریب، صرف ایک بے ہوشی کے ڈاکٹر کے ساتھ 399 آپریشن اور ریڈیالوجسٹ کے نہ ہونے کے باوجود تقریبا تئیئس سو الٹراساونڈ کی گئیں۔ اجلاس میں پچھلے چند دنوں میں ہسپتال ہذا میں لڑائی جھگڑے کے چند ناخوشگوار واقعات پر بھی گفتگو ہوئی۔ اس بات پر یہ ہم آواز رائے پائے گئی کہ اس طرح کے واقعات کسی طرح بھی طبی عملہ اور عمومی مفاد عامہ میں نہیں۔لیکن چند شر پسند لواحقین ہسپتال کے ماحول کو خراب کرنے کے لیے جب ڈاکٹروں کے ساتھ پرتشدد رویہ اختیار کرتے ہیں تو کوئی سیکورٹی قوانین نہ ہونے کی وجہ سیڈاکٹرز اور دیگر طبی عملہ اس تشدد کو سہنے پر مجبور پایا جاتا ہے۔ڈاکٹر مبین کے ساتھ کل ہونے والے تشدد کی پی ایم اے مظفر گڑھ نے انتہائی مذمت کی اور سینیر ڈاکٹر عالم خاں کو قتل کی دھمکیاں دینے کی بھی شدید مذمت کی اور اس بات کو درست قرار دیا کہ قانون کا راستہ اختیار کرنا ڈاکٹروں کا بنیادی حق تھا لیکن اگر لواحقین اپنے کیے پر معذرت کر لیں تو ڈاکٹرز اس معاملہ میں کھلے دل پر ان کو معاف کرنے پر تیار ہیں۔ مثبت صحافت اور صحافی ہمارے دستو بازو ہیں اور ہم ان کے شکر گزار ہیں  اجلاس کے شرکاء  میں سینیئر نائب صدور ڈاکٹر مقبول عالم، ڈاکٹر ارشاد مرکنڈ، ڈاکٹر عبدلحفیظ سکھانی، ڈاکٹر یاسر رسول، ڈاکٹر اعجاز گبول، مرکزی پریس سیکرٹری ڈاکٹر اطہر کلیم، ڈاکٹر عالم خاں، ڈاکٹر غلام اکبر چانڈیہ، ڈاکٹر محسن، ڈاکٹر اعجاز گدارہ، ڈاکٹر نذیر، ڈاکٹر سلطان مکول، ڈاکٹر نثیر لغاری، ڈاکٹر معین الدین، ڈاکٹر مبین و دیگر سیئنر اور جونئیر ڈاکٹرز نے شرکت کی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر