موبائل فون پر دھمکی آمیز کال کر کے بھتہ طلب کرنے والے دو ملزمان گرفتار

موبائل فون پر دھمکی آمیز کال کر کے بھتہ طلب کرنے والے دو ملزمان گرفتار

پشاور(کرائمز رپورٹر) کپیٹل سٹی پولیس پشاور نے شہر کے نواحی علاقہ ارمڑ میں سرکاری سکول کے پرنسل کو موبائل فون پر دھمکی آمیز کال کرنے اور اس سے لاکھوں روپے بھتہ طلب کرنے والے دو ملزمان گرفتار کرلئے، گرفتار افراد پچھلے کئی روز سے مسلسل سکول پرنسپل کو فون پر دھمکیاں دے کر رقم اور اسلحہ کا مطالبہ کر رہے تھے، گرفتار دونوں ملزمان کا تعلق ارمڑ میانہ سے ہے جنہوں نے ابتدائی تفتیش کید وران موبائل فون پر بھتہ طلب کرنے کا اعتراف کر لیا ہے جن کے خلاف مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ہے تفصیلات کے مطابق مدعی محمد جان ولد عبدالجلیل حال گورنمنٹ ہائی سکول پرنسپل ارمڑ نے تھانہ ارمڑ پولیس کو رپورٹ درج کراتے ہوئے بیان کیا کہ چند نامعلوم ملزمان اسے فون کال کرکے خود کو دہشت گرد تنظیم کے اہلکار ظاہر کرتے ہیں اور فون پر دھمکی آمیز کال کے ذریعے اس سے لاکھوں روپے نقد اور اسلحہ طلب کرتے ہیں، جس کی رپورٹ پر تفتیش شروع کی گئی ایس ایس پی آپریشن ظہور بابرآفریدی نے واقعہ کا سختی سے نوٹس لیتے ہوئے ایس پی صدر ڈویژن صاحبزادہ سجاد کی سربراہی میں ڈی ایس پی صدر سرکل فضل واحد اور ایس ایچ او تھانہ ارمڑ رفیق خان پر مشتمل خصوصی ٹیم تشکیل دیتے ہوئے ملوث ملزمان کو گرفتار کرنے کا ٹاسک حوالہ کیا، ڈی ایس پی فضل واحد کی نگرانی میں ایس ایچ او رفیق خان نے جدید سائنسی خطوط پر تفتیش جاری رکھتے ہوئے جس کے دوران موبائل فون پر مقامی سکول کے پرنسپل کو دھمکی آمیز کال کرکے بھتہ اور اسلحہ طلب کرنے والے ملزمان کا سراغ لگا گزشتہ روز کامیاب کارروائی کے دوران ملزمان سید احمد شاہ ولد گلزار اورعطاء اللہ ولد گلشاد ساکنان ارمڑ کو گرفتار کر لیا، دونوں گرفتار ملزمان نے ابتدائی تفتیش کید وران موبائل فون پر مقامی سکول کے پرنسپل کو دھمکی آمیز کال کرنے اور اس سے بھتہ طلب کر نے کا اعتراف کر لیا ہے جن کے قبضہ سے واردات میں استعمال ہونے والی موبائل فون، موبائل سم اور ایک عدد گاڑی بھی برآمد کر لی گئی ہے، گرفتار دونوں ملزمان سے مزید تفتیش جاری ہے

مزید : پشاورصفحہ آخر