نوشہرہ، محکمہ ایکسائز کی جانب سے لوٹ مار کا بازار گرم، گاڑی مالکان کا احتجاج

نوشہرہ، محکمہ ایکسائز کی جانب سے لوٹ مار کا بازار گرم، گاڑی مالکان کا احتجاج

نوشہرہ(بیورورپورٹ) محکمہ ایکسائز خیبرپختونخوا نے لوٹ مار کابازار گرم کرکے سرکاری شیڈول 30روپے کی بجائے 300 روپے وصول کررہے ہیں گاڑی مالکان کا شدید احتجاج اگر یہ سلسلہ بند نہ کیاگیا تو گاڑیوں کو روڈ پر کھڑی کرکے روڈکو ہرقسم کی ٹریفک کیلئے بند کردیں گے صوبائی حکومت کے واضح ہدایات کے باوجود محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کا پشاور، نوشہرہ اور دیگر اضلاع میں شیڈول ریٹ سے زائد وصولی سے مالکان شدید مشکلات سے دوچار تفصیلات کے مطابق محکمہ محکمہ ایکسائز خیبرپختونخوا کے تمام اضلاع میں محکمہ ایکسائز کے اہلکار 5سے 8 ٹن کے وزن کے ٹرک سے 200 اور 400روپے فی گاڑی وصول کررہے ہیں جو کہ شیڈول ریٹ سے کئی سو گنا زیادہ ہے صوبائی حکومت کی جانب سے کرپشن کے خاتمے کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے اور سرعام سے رشوت کا بازار گرم ہے محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن کے اہلکاروں نے اپنا قانون قائم کررکھا ہے اور ٹرک مالکان کو بلاجواز تنگ کرکے ان سے 30 روپے کی بجائے 200سے 400 روپے تک وصول کررہے ہیں اس ظلم کے خلا ف ہم بھرپور احتجاج کریں گے یہ ظالمانہ سلسلہ فوری طورپر بند کیاجائے اور شیڈول ریٹ کے مطابق گاڑیوں سے ٹیکس وصول کیاجائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر