رینٹل پاور کرپشن کیس،نیب کو مزید شواہد پیش کرنے کی مہلت مل گئی

    رینٹل پاور کرپشن کیس،نیب کو مزید شواہد پیش کرنے کی مہلت مل گئی

 اسلام آباد(آن لائن) اسلام آباد ہائیکورٹ کے قائم مقام چیف جسٹس عامرفاروق اورجسٹس میاں گل حسن اورنگزیب پرمشتمل ڈویڑن بنچ نے کارکے رینٹل پاور پراجیکٹ میں مبینہ کرپشن کا کیس کے ملزم راجہ بابر علی ذولقرنین کی ضمانت کے خلاف نیب اپیل پرعدالت نے نیب کو ہدایت کی ہے کہ ضمانت منسوخ کرنے پرعدالت کومطمئن کریں جس پرنیب کی طرف سے مزید شواہدکیلئے مہلت کی استدعاپر سماعت ملتوی کردی گئی۔گذشتہ روزسماعت کے دوران جسٹس عامرفاروق نے استفسار کیاکہ سپریم کورٹ نے ضمانت دی ہے، آپ یہاں کیسے آئے؟سپریم کورٹ سے ضمانت کے بعد اپیل ہائیکورٹ کیسے سنے؟عدالت کو مطمئن کیاجائے اس پرنیب پراسیکیوٹر جہانزیب بھروانہ نے کہاکہ اس کیس میں مزید شواہد پیش کرنا چاہتے ہیں، کیس میں سابق وفاقی وزیر اور سابق سیکرٹری بجلی وپانی  بھی ملوث تھا،سابق سیکرٹری شاہد رفیع نے اس کیس میں وعدہ معاف گواہ بننے کی درخواست دی ہے،جس پران کا بیان بھی ریکارڈکیاجاچکاہے، ملزم راجہ بابر ذوالقرنین نے قومی خزانے کو 28 میلین کا نقصان پہنچایا،راجہ بابر ذوالقرنین کو 7 کال آپ نوٹسسز بھیجے گئے لیکن وہ انوسٹی گیشن کے لئے آنے کو تیار ہی نہیں،عدالت نے کہاکہ نیب کیس کا دوبارہ جائزہ لے اور پھر عدالت کو مطمئن کرے عدالت نے کیس کی سماعت ملتوی کردی۔

 رینٹل پاورکیس

مزید : صفحہ آخر