ٹیکسوں کی بھرمار سے معاشی صورتحال بہتر نہیں ہوسکتی

  ٹیکسوں کی بھرمار سے معاشی صورتحال بہتر نہیں ہوسکتی

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی رہنما و سابق وزیر تجارت خرم دستگیر نے کہا ہے کہ ٹیکسوں کی بھرمار کرکے کاروباری حضرات کی کمر توڑ کررکھ دی گئی ہے ایسا کرکے حکومت نہ تو ٹیکس اکٹھا کر سکتی ہے اور نہ ہی معاشی صورت حال میں کوئی بہتری لا سکتی ہے آج حکومتی پالسیوں کی وجہ سے ملک بھر کا تاجر طبقہ ہڑتال کی کال دینے پر مجبور ہو گیا ہے ۔ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جب ہماری حکومت تھی تو ہم نے کوئی بھی ایسا ٹیکس متعارف نہیں کروایا تھا کہ جس کی وجہ سے ان کو ہڑتال کی ضرورت پیش آئی ہو آج کی حکومت تاجروں کے مسائل کو سننے اور دیکھنے کی بجائے انہیں دھمکیاں دے رہی ہے اور اس قدر تاجروں کو ہراساں کررہی ہے کہ کاروباری حضرات اپنا کاروبار بند کرکے بیرون ملک بھاگنے پر مجبور ہو گیا ہے اگر میڈےا اس بات کی تحقیقات کرے تواس کو معلوم ہو گا کہ ان کی وجہ سے اب تک کتنے لوگ پاکستان چھوڑ کر چلے گئے ہیں ۔

خرم دستگیر

مزید : صفحہ اول


loading...