پی ٹی آئی حکومت تبدیلی کے نام پر ملک اور عوام پر عذاب کی شکل میں مسلط ہوچکی،13 جولائی تاجروں کی ہڑتال،سینیٹر ساجد میر نےحمایت کردی

پی ٹی آئی حکومت تبدیلی کے نام پر ملک اور عوام پر عذاب کی شکل میں مسلط ہوچکی،13 ...
پی ٹی آئی حکومت تبدیلی کے نام پر ملک اور عوام پر عذاب کی شکل میں مسلط ہوچکی،13 جولائی تاجروں کی ہڑتال،سینیٹر ساجد میر نےحمایت کردی

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) مرکزی جمعیت اہل حدیث پاکستان کے سربراہ سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کل 13 جولائی کو تاجروں کی طرف سے اعلان کردہ ہڑتال کی حمایت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہڑتال جلسے اور جلوس جمہوری حق ہےجسے ریاستی جبر کے ذریعے روکانہیں جاسکتا،عمران خاں ماضی میں شہر بند کرنے کا اعلان کیا کرتے تھے اور یہ بھی یاد کریں کہ وہ یوٹیلیٹی بلز نذرآتش کیا کرتے تھے،احتجاج کا یہ حق عوام سے نہیں چھینا جاسکتا،اب تو ٹیکسوں کی بھرمار اور مہنگائی نے عوام کا جینا دوبھر کردیا ہے۔ کینیڈا سے مرکزی جمعیت اہل حدیث لاہور شہر کے امیر ڈاکٹر ریاض الرحمن یزدانی سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر  پروفیسر ساجد میر نے کہا کہ ٹیکس کے نام پر تاجروں اور چھوٹے دکانداروں کا گھیرا تنگ کیا جارہا ہے۔آئی ایم ایف کے مطالبے پر رواں ماہ گیس کی قیمت میں 200 فیصد اوربجلی کی قیمت میں 31فیصد اضافے کے بعد اگست میں ایک بار پھربجلی کی قیمت میں اضافے کے آئی ایم ایف کے مطالبے پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے پروفیسر ساجد میر کا کہنا تھا کہ تبدیلی کی دعویدارموجودہ حکومت کی جانب سے گزشتہ 10 ماہ میں بجلی،گیس، پیٹرول، دواؤں اورخورونوش کی اشیا پر ٹیکسوں کی بھرمار اور قیمتوں میں اضافے کی وجہ سے عام آدمی کا جینا دوبھر کردیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ڈالر کو بے لگام اور موجودہ دور کی ایسٹ انڈیا کمپنی آئی ایم ایف کی خواہشات کی تکمیل کے لیے ملک کو گروی اور عوام کو غلام بنایا جارہا ہے،احتساب کے ا داروں کو متنازع بناکرملک کی جڑیں کھوکھلی کی جارہی ہیں،حکومت عوام کو کسی قسم کا بھی ریلیف فراہم کرنے کے بجائے ہر روز مہنگائی کے بم گرا رہی ہے،50 لاکھ گھر،2 کروڑ نوکریاں اور بیرون ملک لوٹی ہوئی دولت کی واپسی کے تمام دعوے جھوٹ کا پلندا ثابت ہوئے ہیں،پی ٹی آئی حکومت تبدیلی کے نام پر ملک اور عوام پر عذاب کی شکل میں مسلط ہوچکی ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور