”یہ جج نواز شریف کا بھی کیس سنے اور ۔۔۔“بلاول بھٹو نے خدشات کا اظہار کردیا

”یہ جج نواز شریف کا بھی کیس سنے اور ۔۔۔“بلاول بھٹو نے خدشات کا اظہار کردیا
”یہ جج نواز شریف کا بھی کیس سنے اور ۔۔۔“بلاول بھٹو نے خدشات کا اظہار کردیا

  


سکھر(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہاہے کہ میں نہیں جانتا کہ جج ارشد ملک کی ویڈیو کتنی سچ ہے لیکن یہ جج نوازشریف اور آصف زرداری کا کیس سن رہا ہے تو کیا یہ اتفاق ہے؟ ویڈیو کا معاملہ بہت بڑا سوالیہ نشان ہے؟صاف اورشفاف تحقیقات ہونی چاہیے،رات کے اندھیرے میں ججزکیخلاف ریفرنسز بھجوایا جاتا ہے،یہ وہی ادارے کے ججزہیں جنہوں میرے نانا اورمیری والدہ کے کیس میں انصاف نہیں دیا،دال میں کچھ تو کالا ہے،سب سیاسی جماعتوں نے اعلیٰ عدلیہ سے جج کی ویڈیو کی تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے، اس جج کو ہٹادیا گیا ہے اور امید ہے کہ اسے اپنی صفائی کا موقع دیا جائے گا۔سکھر میں پریس  کانفرنس کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ گھوٹکی کے عوام نے اپنا فیصلہ سنایا جو سلیکٹڈ کو سمجھ نہیں آرہا، جتنا مرضی دباؤ ڈالو  لیکن جیت پیپلزپارٹی کی ہوگی، عوام دشمن بجٹ اور کٹھ پتلی حکومت کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار ہیں اور ہمارا احتجاج جاری رہے گا،وفاقی حکومت نے معیشت کا برا حال کردیا ہے، وفاق صوبوں کامعاشی قتل کررہا ہے، پنجاب اورخیبرپختونخواکی طرح سندھ کے حق پر بھی ڈاکہ ڈالا جا رہا ہے، ہم مہنگائی، عوام دشمن بجٹ اورکٹھ پتلی حکومت کے خلاف احتجاج کریں گے جب کہ پیپلزپارٹی عوامی خدمت پریقین رکھتی ہے، ہم نے مفت علاج اورصحت کوترجیح دی، سندھ کے ہر ضلع میں دل کے مرض کاعلاج مفت فراہم کیا جارہا ہے، سندھ کا مقابلہ دوسرے صوبوں سے نہیں بیرون ممالک سے ہورہا ہے۔بلاول بھٹو زرداری نےاحتساب عدالت کے جج ارشد ملک کی ویڈیو پر بات کرتے ہوئے کہا کہ ویڈیو کا معاملہ بہت بڑا سوالیہ نشان ہے، ویڈیولیک کی صاف اورشفاف تحقیقات ہونی چاہیے،رات کے اندھیرے میں ججزکے خلاف ریفرنسز بھجوایا جاتا ہے، یہ وہی ادارے کے ججزہیں جنہوں میرے نانا اورمیری والدہ کے کیس میں انصاف نہیں دیا، جب کہ کچھ تو دال میں کالا ہے یہی جج نوازشریف اور آصف زرداری کے کیسز سنیں گے تو کیا یہ اتفاق ہے؟یہ اداروں کے لیے بڑا نقصان دہ ہوسکتا ہے،ادارے آزاد ہونے چاہیئں اس کے لیے جدوجہد جاری رکھوں گا اور دباؤکے بغیر فیصلے ہوں گے تو اچھے ہوں گے،اعلیٰ عدلیہ کیلئے چیلنجنگ وقت ہے، احتساب عدالت کے جج ارشد ملک کے خلاف شفاف تحقیقات کی جانی چاہیے تاہم انہیں صفائی کا موقع ملنا چاہیے۔ چیئرمین سینیٹ کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر بلاول کا کہنا ہے کہ سینیٹ الیکشن میں اپوزیشن اراکین کی تعداد زیادہ ہے اور چیئرمین سینیٹ اپوزیشن کا ہی بنے گا۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی سیاست سلیکشن پر یقین رکھتی ہے، وہ سمجھتے ہیں کہ اوچھے ہتھکنڈوں سے ہمیں ڈرادیں گے مگر ہم ان کی سازشیں ناکام بنائیں گے۔

مزید : قومی