کرپٹ عناصر کو اب بھاگنے نہیں دیا جائے گا،مومنہ وحید

  کرپٹ عناصر کو اب بھاگنے نہیں دیا جائے گا،مومنہ وحید

  

لاہور(پ ر) چیئر پرسن سٹیڈنگ کمیٹی فار چیف منسٹر انسپیکشن ٹیم مومنہ وحید نے کہا ہے کہ ن لیگ اور پیپلزپارٹی کے دور میں کرپشن کی تحقیقات مکمل کرلی گئی ہیں، دونوں جماعتوں کے قائدین کو اب بھاگنے نہیں دیا جائے گا،وفاقی حکومت کی ہدایت پر ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ قرضہ انکوائری کمیشن نے 24ہزار ارب روپے کے ملکی وغیرملکی قرض کے استعمال میں بے ضابطگیوں اور خورد برد سے متعلق تحقیقات مکمل کرتے ہوئے رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو پیش کردی ہے۔

انکوائری رپورٹ میں 2008سے 2018کے دوران پاکستان پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ ن کے دورحکومت میں مختلف ترقیاتی منصوبوں میں مبینہ طورپر 1ہزار ارب روپے سے زائد قومی خزانے کو نقصان پہنچانے کی نشاندہی کرکے دونوں اپوزیشن جماعتوں کیلئے خطرے کی گھنٹی بجادی گئی ہے۔ اورنج لائن ٹرین صحت اور تعلیم کے شعبے سمیت 1ہزار سے زائد منصوبوں کی انکوائری کی گئی۔اکنامک افئیر ڈویژن، وزارت خزانہ سمیت مختلف وفاقی وصوبائی وزارتوں کے اعلیٰ حکام پر ذمہ داری عائد کی گئی ہے۔ ایشیائی ترقیاتی بینک اور عالمی بینک کے قرضوں سے پاکستان میں شروع ہونیوالے منصوبوں کی کامیابی کی 25تا30فیصد شرح کو بھی مدنظر رکھا گیا۔ اہم ترین وزارتوں بالخصوص لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی میں تعینات افسران کی ہر اہم منصوبے میں شمولیت،بیوروکریسی اور سیاستدانوں کے 13خاندانوں کے کردار کو بھی اجاگر کیا گیا ہے۔انکوائری کمیشن نے قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والوں کے خلاف کارروائی کی سفارش کی ہے۔ڈپٹی چیئرمین نیب حسین اصغر کی سربراہی میں قائم 11رکنی اعلی ٰسطح کمیشن نے 11ماہ میں انکوائری مکمل کی۔ انکوائری کمیشن میں نیب، آئی ایس آئی، ایم آئی، آئی بی،ایف آئی اے،سٹیٹ بینک آف پاکستان،ایف بی آر، ایس ای سی پی اور وزارت خزانہ کے حکام شامل تھے۔ ذرائع کے مطابق سینکڑوں صفحات پرمشتمل ضخیم رپورٹ میں 2ہزار400ارب روپے کے ملکی وغیرملکی قرض کا حصول اور مختلف ترقیاتی منصوبوں پر خرچ میں بے ضابطگیوں اور منظور نظرافراد کو نوازنے کی انکوائری کی گئی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -