ناقص پالیسیوں، معاشی بدحالی اور ناکام بجٹ کے خلاف اے این پی خواتین کا احتجاجی مظاہرہ

ناقص پالیسیوں، معاشی بدحالی اور ناکام بجٹ کے خلاف اے این پی خواتین کا ...

  

پشاور (سٹی رپورٹر) عوامی نیشنل پارٹی کے مختلف اضلاع کی خواتین ورکرز نے ہفتہ کے روز پشاور پریس کلب کے سامنے مہنگائی، صوبہ بھر میں ناروا لوڈشیڈنگ، معاشی بدحالی اور حکومت کی ناکام پالیسیوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جس میں صوبائی ترجمان ثمرہارون بلور،صوبائی نائب صدر شازیہ اورنگزیب، صوبائی جائنٹ سیکرٹری ڈاکٹر شاہین ضمیر اور مختلف اضلاع کے عہدیداروں و کارکنان نے شرکت کی۔مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے اے این پی کی صوبائی ترجمان و رکن صوبائی اسمبلی ثمر ہارون بلور نے کہا کہ کورونا وبا سے پہلے ہی پاکستان تحریک انصاف کی ناقص پالیسیز کی وجہ سے ملکی معیشت تباہی کے دھانے پر ہے اور موجودہ کمزور ترین بجٹ کی وجہ سے عوام پر مزید بوجھ ڈال دیا گیا ہے۔ الیکٹڈ اور سلیکٹڈ حکمرانوں کا فرق ہی یہی ہے کہ عوام مینڈیٹ کے ذریعے آنیوالی قیادت اور حکومتیں بہترین حکمت عملی بناتے ہیں جبکہ آج پی ٹی آئی کی وجہ سے ہر سیکٹر شدید ترین بحران کا شکار ہے۔ ترقی کی شرح ملکی تاریخ میں پہلی دفعہ منفی میں ہے۔ انہی پالیسیوں کی وجہ سے صوبہ بھر بالخصوص اور پورے ملک میں بالعموم عوام کا جینا مشکل ہوچکا ہے۔ مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی نائب صدر شازیہ اورنگزیب نے بھی حکومتی جماعت کی عوام دشمن پالیسیوں پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ سات سال سے صوبے پر پی ٹی آئی کو مسلط کیا گیا ہے، پورے صوبہ میں کوئی اہل بندہ نہیں کہ ہیلتھ، صحت یا کوئی دوسرے محکمے کو درست راہ پر گامزن کرسکے۔ صوبائی جائنٹ سیکرٹری ڈاکٹر شاہین ضمیر کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی ایک کرپٹ جماعت ہے جس میں فصلی بٹیروں کا راج ہے۔ اس جماعت کو جو لوگ لائے ہیں وہ بھی اب اپنی کئے پر نادم ضرور ہوں گے مقررین نے اس بات کا عزم کیا کہ عوامی نیشنل پارٹی کورونا وبا کے بعد گراس روٹ لیول پر ورکرز کو ایک بار پھر متحرک کرکے اضلاع کی سطح پر حکومتی عوام دشمن پالیسی کا راستہ روکے گی اور عوام کے سامنے انکے اصل چہرے کو بے نقاب کرے گی

مزید :

پشاورصفحہ آخر -