لاک ڈاؤن،شہر بھر کے بازاروں میں رش کی شرح ففٹی ففٹی رہی

لاک ڈاؤن،شہر بھر کے بازاروں میں رش کی شرح ففٹی ففٹی رہی

  

پشاور (سٹی رپورٹر)صوبائی دارلحکومت پشاور میں کورونا لاک ڈاون میں ناغہ کے پہلے روز ہفتہ کو شہر بھر کے بازاروں میں رش کی شرح ففٹی ففٹی رہی جبکہ کورونا سے بچاو کی ایس او پیز پر عمل درآمد میں مکمل خلاف ورزی جاری ہے جسکے باعث کورونا کے کیسز میں اضافہ کا خدشہ ہے جبکہ صوبائی حکومت ایس او پیز پر عمل درآمد کروانے میں مکمل نا کام ہو چکی ہے تفصیلات کے مطابق لاک ڈاون میں ہفتہ کے روز چھٹی کے باوجود مختلف بازار وں جنمیں بورڈ بازار،جی ٹی روڈ،یونیورسٹی روڈ اور ہشتنگری میں زیادہ تر دکانیں کھلی رہی جبکہ عوام نے کورونا سے بچاو کے حفاظتی تدابیر کو جوتھے کی نوک پر رکھا ہے ہے اور ایس او پیز کو مذاق کے سیوا کچھ نہیں سمجھتے اسکے علاوہ صدر بازار اور شعبہ بازار میں دکانیں زیادہ تر بند رہی،شہری میں سڑکوں پر ٹریفک کا بھی معمول سے کم رہی اور شہر کی سڑکیں سنسان رہی کوروناوباء کے پیش نظر اختیاطی تدابیر میں عوام شروع سے ہی غفلت برتنے لگی تاہم اب ایس او پیز کا کوئی نام و نشان تک نہیں جبکہ صوبائی حکومت ضابطہ اخلاق پر عمل درآمد کروانے میں بری طرح نا کام ہو چکی ہے اور عوم کی غیر سنجیدگی نے رہی سہی کسر پوری کر دی جسکے باعث شہر میں کورونا کے کیسز میں مزید اضافہ کا امکان ظاہر کیا جا رہا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -