پاک چین ہیلتھ کوریڈورکا کورونا سے نمٹنے میں اہم کردار ہے،ماہرین

  پاک چین ہیلتھ کوریڈورکا کورونا سے نمٹنے میں اہم کردار ہے،ماہرین

  

اسلام آباد (آئی این پی) کوویڈ 19 پھیلنے کی شدید صورتحال کے تحت، صحت اور نگہداشت کے شعبے میں پاکستان اور چین کے درمیان تعاون متاثرہ لوگوں کی صحتیابی کیلئے بروقت مدد فراہم کرنے میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ہفتہ کو گوادر پروکے مطابق شینڈونگ یونیورسٹی میں بطور سرجن اور پی ایچ ڈی سکالر، اور میڈیکل کے طالب علم کی حیثیت سے چین میں ایک دہائی سے زیادہ وقت گزارنے والے ڈاکٹر محمد شہباز نے کہا ہے کہ سی پیک پاکستان اور چین میں صحت کی دیکھ بھال کی سہولیات اور بنیادی ڈھانچے میں تعاون لائے گا۔ کوویڈ۔19 وبائی امراض نے بی آر آئی ممالک خصوصا چین اور پاکستان کو بہتر تعاون کے لیے بہت بڑا مواقع فراہم کیا ہے۔فریقین کے مابین متواتر آن لائن ملاقاتیں بہت ضروری ہیں۔ چینی ماہرین وبائی مرض کا بہتر مقابلہ کرنے کیلئے پاکستانی ڈاکٹروں کو تربیت دے سکتے ہیں۔ ڈیٹا شیئرنگ بہت ضروری ہے۔پاکستانی ہسپتالوں کو ڈیجیٹل بنایا جائے۔ پہلے مرحلے میں ٹاپ 20 ہسپتالوں میں بگ ڈیٹا سینٹرز قائم کیے جاسکتے ہیں۔ ٹیلی میڈیسن مشترکہ سیشن کثرت سے منعقد ہوسکتے ہیں۔ڈاکٹر محمد شہباز نے کہا کہ ہیلتھ کوریڈور چین کا ایک چھا امیج اجاگرکرے گا کیونکہ اب تک چین نے صرف پاکستان میں توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کی اور اب میڈیکل ایجوکیشن اور میڈیکل ٹورزم میں بہت کچھ کیا جاسکتا ہے،" ڈاکٹر محمد شہباز نے کہا 2017 میں ہیلتھ کوریڈور کے تصور کا آغاز کیا تھا۔ بعدازاں، چینی اور پاکستانی انسٹی ٹیوٹ کے مابین تعاون شروع کیا گیا جس سے صحت کی دیکھ بھال کے اہداف کا حصول ممکن ہوا۔ ہیلتھ کوریڈور نے ٹیلی میڈیسن، ورچوئل کلاس رومز قائم کیے۔

ڈاکٹر محمد شہباز

مزید :

پشاورصفحہ آخر -