پاکستان میں ستر لاکھ سے زائد معصوم بچے محنت مزدوری پر مجبور

پاکستان میں ستر لاکھ سے زائد معصوم بچے محنت مزدوری پر مجبور
پاکستان میں ستر لاکھ سے زائد معصوم بچے محنت مزدوری پر مجبور

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)آئی ایل او کے مطابق اِس وقتپاکستان میں بھی پانچ سے نو سال کی عمر کے ستر لاکھ سے زائد بچے سکول جانے کی بجائے روزی روٹی کے چکر میں پڑے ہوئے ہیں جبکہ دنیابھر میں 215ملین بچے مزدوری کرنے پر مجبور ہیں جن کی نصف تعدادنہایت مشکل کام کررہی ہے ۔اسلام آباد سمیت ملک کے مختلف علاقوں میں چار سال تک کے بچے گاڑیوں کی ورکشاپس ، سبزی منڈیوں اور گھروں میں کام کررہے ہیں جو اپنی پڑھنے کی عمر میں معاشی حالات کامقابلہ کررہے ہیں لیکن اُن کے لیے حکومت کی طرف سے کوئی قابل عمل لائحہ عمل طے نہیں کیاگیا اور بعض اوقات بچے گاڑیوں کی ورکشاپوں میں اپنے استادوں کے تشدد کا نشانہ بھی بنتے ہیں ۔

مزید :

انسانی حقوق -