جمشید دستی کو گرفتار کرکے آمریت کی بدترین مثال قائم کی گئی‘ لیاقت بلوچ

جمشید دستی کو گرفتار کرکے آمریت کی بدترین مثال قائم کی گئی‘ لیاقت بلوچ

ملتان(سٹی رپورٹر)جماعت اسلامی کے مرکزی سیکریٹری جنرل لیاقت بلوچ نے کہا ہے کہ جمشید دستی کو قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران گرفتار کرکے اور کال کوٹھری میں ڈال کر آمریت سے بھی بدترین مثال قائم کی گئی جس کی پرزور مذمت کرتے ہیں اور ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہیں(بقیہ نمبر39صفحہ12پر )

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت انتقامی کاروائیوں سے باز رہے ورجہ جو بیج وہ آج بو رہی ہے اس کا اسے کل حساب دینا پڑے گا انہوں نے کہا کہ ایک طرف حکومتی وزراء عدلیہ کی توہین پر توہین کر رہے ہیں تو دوسری طرف اب تخت لاہور نے منتخب اراکین اسمبلی کے خلاف انتقامی کاروائیاں بھی شروع کر دی ہیں جس کی وجہ سے اپوزیشن کو اب کرپٹ، ظالم اور لٹیرے حکمرانوں کے خلاف متحد ہو نا پڑے گا آج اگر جمشید دستی کے ساتھ یہ ناانصافی ہو ئی ہے تو کل کسی اور رکن قومی و صوبائی اسمبلی کے ساتھ بھی ایسی زیادتی ہو سکتی ہے اسی لئے اپوزیشن کو سرجوڑ کر بیٹھنا ہو گا انہوں نے کہا کہ بجٹ کا سارا فنڈز صرف اپر پنجاب اور رائیونڈ کے لئے ہے ہمیشہ کی طرح جنوبی پنجاب کو اس بار بھی محرومی کا سامنا کرنا پڑے گا ۔

لیاقت بلوچ

مزید : ملتان صفحہ آخر