آئی پی پیز کو ادائیگیوں کا حتمی فیصلہ نہ ہوسکا‘ پاور پروڈکشن کا بحران

آئی پی پیز کو ادائیگیوں کا حتمی فیصلہ نہ ہوسکا‘ پاور پروڈکشن کا بحران

ملتان (سٹاف رپورٹر) حکومت کی جانب سے آئی پی پیز کو ادائیگیوں کا حتمی فیصلہ نہ ہونے کے باعث مسائل گھمبیر ہو گئے ۔ معلوم ہوا ہے کہ وفاقی حکومت نے انڈی پینڈنٹ پاور پروڈیوسرز ( آئی پی پیز) کو ادائیگیوں کا کوئی حتمی فیصلہ نہیں کیا۔ آئی پی پیز ایڈوائزری کونسل کی جانب سے واجبات اور (بقیہ نمبر45صفحہ12پر )

بقایاجات کی ادائیگی کو یقینی بنانے کیلئے کی گئی اپیل کو حکومت نینہصرف رد کردیا بلکہ اسے بلیک میلنگ قرار دے کر کراروائی کرنے کی دھمکی بھی دے دی ہے۔ تاہم ادائیگیوں کے حوالے سے کوئی مثبت پیش رفت سامنے نہیں آسکی ہے اور ادائیگیوں کیلئے طے شدہ مدت بھی گزر چکی ہے۔ آئی پی پیز نے مالی بحران کے حوالے سے حکومت کو آگاہ کرتے ہوئے 200 ارب روپے سے زائد کی فوری ادائیگی کی درخواست کی تھی اور لوڈشیڈنگ میں کسی بھی متوقع اضافے کو روکنے کے لئے جلد از جلد ادائیگی کو یقینی بنانے پر زور دیا تھا۔ انڈی پینڈنٹ پاور پروڈیوسرز ( آئی پی پیز) نے حکومت سے کہا ہے کہ واجبات اور بقایاجات کی فوری ادائیگی نہ ہوئی تو بجلی کی پیداوار میں کمی اور لوڈشیڈنگ میں غیر معمولی اضافہ ہوسکتا ہے۔

آئی پی پیز

مزید : ملتان صفحہ آخر