پانامہ جے آئی ٹی سے کچھ حاصل ہونے والا نہیں، شاہ اویس نورانی

پانامہ جے آئی ٹی سے کچھ حاصل ہونے والا نہیں، شاہ اویس نورانی

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) جمعیت علما پاکستان کے سربراہ صاحبزادہ شاہ اویس نورانی نے کراچی آپریشن کولولی پاپ قراردیتے ہوئے کہاہے کہ کراچی میں عارضی امن ہے ،ان کا کہنا ہے کہ پانامہ جے آئی ٹی سے کچھ حاصل ہونے والا(بقیہ نمبر53صفحہ7پر )

نہیں اگرجے آئی ٹی سے کچھ حاصل ہوتا سانحہ بلدیہ کے اصل ملزمان کوسزائیں ہوجاتیں ۔ اگرکرپشن کے خلاف بلاامتیازکارروائی ہوتو سندھ اوربلوچستان میں جے آئی ٹی سے بڑے کیس برآمد ہونگے ۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے اپنی رہائشگاہ بیت رضوان کلفٹن میں صحافیوں کے اعزاز میں دی گئی افطارپارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پرجے یوپی کے مرکزی وصوبائی رہنما بھی موجود تھے ۔ صاحبزادہ شاہ اویس نورانی نے کہاکہ کراچی آپریشن جب شروع ہوا تھا تو واضح کردیا تھا کہ یہ عارضی کارروائی ہے اب ثابت ہوگیا ہے کہ کراچی آپریشن لولی پاپ کے سوا کچھ نہیں ہے ۔ میجرجنرل بلال اکبرکے آپریشن اورآج کے کراچی آپریشن کا جائزہ لیا جائے تو سب کچھ واضح ہوجائے گا کراچی میں امن ہے نہ شہریوں کوبجلی اورپانی میسرہے کراچی میں صحت وصفائی کی صورتحال بھی ابترہے کراچی کے رونیوسے پورا ملک چلتا ہے آج کراچی کی کمائی پرعیاشی کرنے والے حکمران ،وڈیرے اورجاگیرداروں نے کراچی کواندھیروں میں ڈبودیا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ حکمران ہوش کے ناخن لیں اورکراچی کے عوام پرظلم بند کریں ۔ شاہ اویس نورانی نے کہاکہ جے آئی ٹی سے کچھ حاصل ہونے والا نہیں جے آئی ٹی اگربامقصد فورم ہے تو سانحہ بلدیہ ، سانحہ بارہ مئی کے ملزمان سزا سے کیوں بچ گئے ۔ جے آئی ٹی نتائج دے سکتی ہے تو پھرسندھ اوربلوچستان میں کرپٹ عناصرپرہاتھ ڈالا جائے تو پانامہ سے بڑی کرپشن کے کیس پکڑے جائیں گے سندھ اوربلوچستان سے پکڑے جانے والے کرپشن کے کیسوں کے مقابلے میں تو پانامہ ایک چھوٹا سا کیس ثابت ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ کراچی میں حالیہ امن عارضی ہے چوہدری نثارعلی خان کی وجہ سے کچھ فرق پڑا ہے ۔ انہوں نے کہاکہ سندھ پولیس کومستحکم کرنے کے لیے کوئی پیکیج کا اعلان نہیں کیا گیا کراچی میں دیرپا امن کے لیے ٹھوس اقدامات کی آج بھی اتنی ضرورت ہے جتنی دوہزارچودہ میں تھی ۔ شاہ اویس نورانی نے کہاکہ کراچی کے شہری بجلی پانی صفائی نہ ہونے کی وجہ سے پریشان ہیں وفاقی اورصوبائی حکومت الزام تراشی میں لگی ہوئی ہیں کراچی کا امن ہی نہیں بجلی پانی اورصفائی کا مسئلہ حل کرنے کے لیے بھی کوئی عملی قدم نہیں اٹھایا گیا ۔ ایک سوال کے جواب میں جے یوپی کے سربراہ شاہ اویس نورانی کا کہنا تھا کہ جولائی میں جے یوپی کے بانی سربراہ شاہ احمد نورانی کے عرس کے بعد ملک میں چارجماعتی سیاسی اتحاد کا اعلان کیا جائے گا جے یوپی اپنی انتخابی حکمت عملی بنارہی ہے جبکہ سیاسی اتحاد کے لیے بھی مختلف سیاسی جماعتوں سے رابطے ہوئے ہیں جولائی کے وسط میں ان کے نتائج سامنے آجائیں گے ۔ انہوں نے کہاکہ ہم موجودہ ملکی سیاسی صورتحال سے غافل نہیں ہیں رمضان المبارک کے بعد جے یوپی ملکی سیاست میں اپنا کردارادا کرے گی ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر