باغبانپورہ : سوتیلی ماں کی سفاکیت ، کم سن بیٹاقتل کر ڈالا ہمسایہ کی چھت سے لاش برآمد

باغبانپورہ : سوتیلی ماں کی سفاکیت ، کم سن بیٹاقتل کر ڈالا ہمسایہ کی چھت سے لاش ...
باغبانپورہ : سوتیلی ماں کی سفاکیت ، کم سن بیٹاقتل کر ڈالا ہمسایہ کی چھت سے لاش برآمد

  


لاہور ( خبر نگار )باغبانپورہ کے علاقہ میں سوتیلی ماں نے سوتن کے گھر بیٹے پیدا ہونے پر چار سالہ سوتیلا بیٹے کو اغواء کرنے کے بعد بڑی بیدر د ی کیساتھ گلا دباکرموت کے گھاٹ اتار ااور نعش پہلے گھر کی پانی والی ٹینکی اور پھر ہمسائے کی چھت پر پھینک دی۔ تفصیلات کے مطابق باغبا نپورہ کے علاقہ مدینہ کالونی کے رہائشی یونین کونسل کے چیئرمین مہر شہباز احمد چاندی نے پہلی بیوی شبانہ بی بی کے ہاں بیٹیاں پیدا ہونے پر چند سال قبل دوسری شادی کر لی اور دوسری بیوی سے دوبیٹے پیدا ہوئے اس پر شبانہ بی بی کا اکثر اپنے خاوند چیئر مین مہر شہباز احمد چاندی سے جھگڑا رہتا تھا۔چار روز قبل شبانہ بی بی نے سوتیلے چار سالہ بیٹے شعیب احمد کو اغوا ء کیا اور مبینہ طور پر اسکا گلہ دباکر موت کے گھاٹ اتار دیا اور نعش گھر کی پانی کی ٹینکی میں چھپا دی ،تاہم اس دوران وہ اپنے خاوند اور سوتن کے ہمراہ گمشدہ بچے کو تلاش کرنے کا بھی ڈرامہ رچاتی رہی جب بچہ نہ ملا تومہر شہباز احمد نے تھانہ باغبانپورہ میں مقدمہ درج کر وادیا ،گزشتہ روز محلے کے گھروں کی چھتوں پر ایک مرتبہ پھر تلاش شروع کی گئی تو ہمسائے کی چھت پر کمسن کی نعش پڑی ملی جس سے بدبو و تعفن اٹھ رہا تھا ،جس پر پولیس کو اطلاع دی گئی جس نے نعش قبضہ میں لے کر مردہ خانہ میں جمع کر وائی اور شک کی بناء پر سوتیلی ماں شبانہ کو شامل تفتیش کر لیا جس نے سارا راز اگل دیا، شبانہ نے بتایا اس نے اپنے گھر بیٹیاں اور سوتن کے گھر بیٹے پیدا ہونے پر کمسن شعیب کوگلادبا کر موت کے گھاٹ اتارنے کے بعد نعش پہلے پانی والی ٹینکی میں چھپا دی اور بعدمیں ہمسائے کے گھر کی چھت پر پھینک دی۔ پولیس نے مہر شہباز احمد کے چھوٹے بھائی شہزاد احمد کے بیان پر قتل کا مقدمہ درج کر کے مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔ اس حوالے سے مقتول شعیب کے والد چیئرمین یونین کونسل مہر شہباز احمد نے بتایا کہ دوسری شادی کرنے پر اس کی پہلی بیوی شبانہ بی بی اکثر لڑائی جھگڑا کرتی تھی اور اس کی دوسری بیوی سے بیٹے ہونے پر اس نے ایسا کیا ہے۔ جبکہ ڈی ایس پی باغبانپورہ قیصر مشتاق نے بتایا کہ ملزمہ شبانہ بی بی کو حراست میں لے لیا گیا ہے اور مزید تفتیش جاری ہے۔

سوتیلی ماں سفاکیت

مزید : صفحہ اول