کراچی، مچھلی پکڑنے والے 2طالبعلم سمندر میں ڈوب گئے، پاک بحریہ کے غوطہ خوروں نے لاشیں نکال لیں

کراچی، مچھلی پکڑنے والے 2طالبعلم سمندر میں ڈوب گئے، پاک بحریہ کے غوطہ خوروں ...

کراچی (خصوصی رپورٹ)کراچی کے علاقے مائی کلاچی کے قریب سمندر سے مچھلیاں پکڑنے کے دوران مدرسے کے2 طالب علم ڈوب گئے، جن لاشیں پاک بحریہ کے غوطہ خوروں نے 5گھنٹے کی جدو جہد کے بعد نکال لیں۔مائی کلاچی روڈ سے متصل سمندرجہاں 17 سالہ حسان اور 12عثمان اور اسکا بھائی 13سالہ طاہر مچھلی کے شکار کی غرض سے پہنچے، اس دوران طاہر اپنے بھائی عثمان اور حسان کو چھوڑ کر کسی کام سے چلاگیا لیکن جب واپس آیا تو وہ وہاں موجود نہیں تھے۔اپنے بھائی اور دوست کو اس جگہ نہ پا کرطاہر نے انہیں ڈھونڈا اور پھر گھر والوں کو اطلاع دی جس کے ایدھی کے غوطہ خور اور پولیس کی نفری موقعے پر پہنچ گئی۔ایدھی کے غوطہ خوروں نے حسان کی لاش کو نکال لیا، لیکن عثمان کا کچھ پتا نہ چل سکا، جس کے بعد پاک بحریہ کے غوطہ خوروں نے پانچ گھنٹے بعد عثمان کی لاش کو بھی سمندر سے نکال لیا۔جاں بحق ہونے والے محمد حسان اور محمد عثمان سلطان آباد کے رہائشی اور مدرسے کے طالب علم تھے۔

بھائی ڈوب گئے

مزید : صفحہ آخر