گگومنڈی: سفاک باپ کی دو سال تک ذہنی معذور سوتیلی بیٹی سے زیادتی

گگومنڈی: سفاک باپ کی دو سال تک ذہنی معذور سوتیلی بیٹی سے زیادتی
گگومنڈی: سفاک باپ کی دو سال تک ذہنی معذور سوتیلی بیٹی سے زیادتی

  


وہاڑی  (ویب ڈیسک) آسمان گرا نہ زمیں پھٹی، درندہ صفت باپ اپنی سوتیلی ذہنی معذور بیٹی کو دوسال تک حوس کا نشانہ بناتا رہا۔ سال قبل متاثرہ 18 سالہ آمنہ کا زبردستی حمل ضائع کروادیا، پندرہ روز قبل دوبارہ حاملہ ہوگئی، کسی کو بتایا تو تمہاری والدہ اور بہنوں کو قتل کردوں گا۔ آمنہ کی چھوٹی بہن عائشہ سے زیادتی کی کوشش پر اس نے اپنی والدہ کو بتادیا۔ میڈیکل رپورٹ میں ڈاکٹرز نے زیادتی کی تصدیق کردی۔ پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق روزنامہ خبریں کے مطابق نواحی گاﺅں 203 ای بی کے رہائشی غلام محمد نے بتایا کہ میری بہن پروین بی بی کا پہلا خاوند فوت ہوگیا تھا جس کے بطن سے تین بیٹیاں ہیں، میں نے اپنی بہن کی شادی محمد عرفان سے کروادی۔  پروین بی بی نے بتایا کہ میری بیٹی آمنہ بی بی بعمر 18 سال کا ذہنی توازن درست نہیں ہے۔ میرا خاوند دو سال سے اسے اپنی حوس کا نشانہ بناتا رہا۔ اب میرے خاوند نے اپنی چھوٹی سوتیلی بیٹی 14 سالہ عائشہ کو اپنی درندگی کا نشانہ بناناچاہا تو اس نے مجھے بتادیا۔ اب مجھے پتہ چلا ہے کہ میرا خاوند دو سال سے میری بیٹی سے زیادتی کررہا ہے اور ایک سال قبل اس نے آمنہ کا حمل بھی ضائع کروایا تھا۔

’میری ماں نے ہمسایوں سے ادھار لے کر مجھے نوکری کیلئے یہاں دبئی خالہ کے پاس بھیجا، لیکن جیسے ہی یہاں آئی میری خالہ نے۔۔۔‘دبئی میں فلیٹ پر پولیس کا چھاپہ، اندر موجود نوجوان لڑکی نے ایسی بات کہہ دی کہ پولیس والوں کی آنکھوں میں بھی آنسو آگئے، رنگے ہاتھوں پکڑے جانے کے باوجود فوری رہا کردیا

تقریباً 15 روز قبل میں اپنی بیٹی کو چیک کروانے ہسپتال لائی تو ڈاکٹر نے بتایا کہ وہ حاملہ ہے۔ میری بیٹی آمنہ نے اشاروں کناروں میں بتایا کہ اس کا سوتیلا باپ اسے کہتا تھا کہ اگر کسی کو بتایا تو تمہاری والدہ اور بہنوں کو قتل کردوں گا۔ متاثرہ لڑکی کی والدہ پروین بی بی کی درخواست پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے صفاک باپ کو گرفتار کرلیا ہے۔

مزید : وہاڑی