پنیٹاگون اور لاک ہیڈ مارٹن میں ایف 35طیاروں کیلئے 34ارب ڈالر کا ریکارڈ توڑ سودا

پنیٹاگون اور لاک ہیڈ مارٹن میں ایف 35طیاروں کیلئے 34ارب ڈالر کا ریکارڈ توڑ سودا

  

واشنگٹن( اظہر زمان، خصوصی رپورٹ) پینٹا گون نے امریکہ کی دیوہیکل نجی کمپنی لاک ہیڈ مارٹن کےساتھ 34ارب ڈالر کا ریکارڈ توڑ سوداکیا ہے۔ امریکی محکمہ دفاع کے اعلان میں بتایا گیا ہے کہ ایک ہینڈ شیک سمجھوتے کے تحت یہ کمپنی 478”ایف35لڑا کا “جیٹ طیارے فراہم کرےگی انڈر سیکرٹری ایلن لارڈ نے سمجھوتے کی تفصیلات بیان کرتے ہوئے بتایا ہے کہ محکمے کی تاریخ کے اس بڑے سودے میں ایک طیارے کی قیمت تقریباً آٹھ کروڑ دس لاکھ ڈالر ہوگی جو موجودہ قیمت سے اندازہ 8.8فیصد کم ہے۔ کمپنی نے اتنے بڑے سودے کیوجہ سے قیمت گھٹا دی ہے انہوں نے بتایا کہ معاہدے کے اختتامی عرصے میں یہ قیمت مزید کم ہوجائے گی ۔یادرہے ایف 35طیاروں کی بنا پر امریکہ اور ترکی کے درمیان ان دنوں تنازع چل رہا ہے پینٹا گون نے اس ماہ دوبارہ ترکی کو خبردار کیا تھا کہ اگر اس نے روس سے ایس 400میزائل سسٹم خریدنے کےلئے پیشرفت کی تو امریکہ اسے ایف 35جیٹ لڑا کا طیارے فراہم کرنے سے انکار کردے گا۔ جمعہ کے روز پینٹا گون نے یہ بھی اعلان کیا تھا کہ وہ ترک پائلٹوں کو یہ طیارے اڑانے کا تربیتی پروگرام بھی معطل کردے گا ایف 35لڑا کا طیارے ابھی تک جنگی طیاروں میں سب پر سبقت لئے ہوئے ہے جسکی رفتار اور جنگی صلاحیت کا اور کوئی طیارہ مقابلہ نہیں کرسکتا۔ اس کے بعد ایف 22ریپٹر اور چین کلے چنگڈو جے 20لڑا کا نمبر آتاہے ۔ایف 35طیارے پہلی مرتبہ 15دسمبر 2006ءمیں فضاءمیں بلند ہوئے تھے۔ تاہم امریکہ نے جولائی 2015ءمیں ایف 35طیاروں کی پہلی سکوارڈن تیار کی تھی۔

ایف 35

مزید :

صفحہ اول -