منی لانڈرنگ کیس، آفتاب محمود کومزید جسمانی ریمانڈپر دینے کی نیب کی استدعا مسترد

منی لانڈرنگ کیس، آفتاب محمود کومزید جسمانی ریمانڈپر دینے کی نیب کی استدعا ...

  

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز اور ان کے بھائی سلمان شہباز کے لئے مبینہ طور پر منی لانڈرنگ کرنے کے کیس میں ملوث آفتاب محمود کومزید جسمانی ریمانڈپر دینے کی نیب کی استدعا مستردکرتے ہوئے انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوا دیاہے۔

گزشتہ رز نیب نے منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار آفتاب محمود کوریمانڈ ختم ہونے پراحتساب عدالت میں پیش کیااورعدالت سے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی،عدالت نے وکلا کے دلائل کے بعد مزید ریمانڈ دینے سے انکارکردیااور اسے جوڈیشل ریماند پر جیل بھجوانے کا حکم جاری کرتے ہوئے نیب کوحکم ہدایت کہ منی لانڈرنگ کیس کاریفرنس جلد پیش کیاجائے،اس کیس میں عدالت مشتاق چینی سمیت 5کے قریب ملزمان کوگرفتار کرکے ریمانڈ لے چکی ہے جبکہ دو ملزمان فضل دادا اور قاسم قیوم تاحال نیب کے پاس جسمانی ریمانڈ پرہیں،عدالت کو بتایا گیا کہ ملزمان سلمان شہباز اورحمزہ شہباز کے ساتھ منی لانڈرنگ میں ملوث تھے،دوران ریمانڈ نیب کے تفتیشی آفیسرملزمان سے تفتیش کی تفصیلات عدالت کر فراہم کر چکے ہیں،عدالت کو وکیل صفائی نے بتایاکہ ملزمان نیب کے پاس کافی دنوں سے ریمانڈ پر ہے اور وہ تمام تصیلات نیب کو بتا چکے ہیں،لہذا عدالت سے استدعاہے کہ مزید جسمانی ریماند نہ دیا جائے جس پر فاضل جج نے مذکورہ بالا حکم جاری کردیاہے۔

مزید :

علاقائی -