پولیس کے شعبہ اے وی سی سی کو ایس آئی یومیں ضم کرنے کا فیصلہ 

پولیس کے شعبہ اے وی سی سی کو ایس آئی یومیں ضم کرنے کا فیصلہ 

  

کراچی (کرائم رپورٹر)آئی جی سندھ کی زیر صدارت اسٹریٹ کرائمز سے متعلق سینٹرل پولیس آفس کراچی میں ایک اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس میں ایڈیشنل آئی جی کراچی ڈاکٹر امیرشیخ نے اسٹریٹ کرائم،موٹرسائیکل لفٹنگ،موبائل فونز اسنیچنگ کیخلاف پولیس حکمت عملی اورلائحہ عمل کا تفصیلی احاطہ کرتے ہوئے سی آئی اے کی تنظیم نو کے حوالے سے تمام تر عملی اقدامات پر مشتمل مسودہ بھی پیش کیا۔اجلاس میں ڈی آئی جی ہیڈکوارٹرزسندھ سمیت آپریشن،سی آئی اے، فائنانس،زونل ڈی آئی جیز،ضلعی/انویسٹی گیشن،اے وی سی سی، ایس آئی یو کے ایس ایس پیزاور آپریشنز سندھ وایڈمن سی پی او کے اے آئی جیز نے بھی شرکت کی۔ آئی جی سندھ نے ڈی آئی جی سی آئی اے کو اجلاس میں کیئے جانیوالے ذیل فیصلوں پر جلدسے جلدعمل درآمد اورروزانہ کی بنیاد پر رپورٹ ارسال کرنیکی ہدایات دیں۔اے سی ایل سی کا نام تبدیل کرکے اینٹی وہیکلزکرائم یونٹ (AVCU)رکھنے کا فیصلہ۔اے وی سی سی کو ایس آئی یو میں ضم کیاجارہا ہے جسکا مقصد بھتہ پرچی،بینک ڈکیتی جیسے جرائم کے ساتھ ساتھ اغواء برائے تاوان کیخلاف بھی مجموعی اقدامات/حکمت عملی کوکامیاب اورمؤثربنانا ہے۔ موٹرسائیکل لفٹنگ/اسنیچنگ کی روک تھام کے لیئے اینٹی موٹر سائیکل کرائم اسکواڈ بنانیکا فیصلہ۔موبائل فونزاسنیچنگ کی روک تھام کے لیئے اینٹی اسٹریٹ کرائم سیل کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے۔آئی جی سندھ نے ڈی آئی جی سی آئی اے کو ہدایات دیں کہ ضلعی پولیس سے مربوط روابط کویقینی بناتے ہوئے جرائم کیخلاف چھاپہ مارٹیمیں تشکیل دیں۔انہوں نے اے وی سی یو(AVCU)کواحکامات دیئے کہ مختلف علاقوں میں منتخب کردہ مقامات پر ناکہ بندی،پیٹرولنگ جیسے اقدامات اُٹھاتے ہوئے اسٹریٹ کرائم کیخلاف پولیس کاروائیوں کوکامیاب اورنتیجہ خیزبنایاجائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -