بتایا جائے وزیر اعظم کی تقریر کے خاموش لمحوں میں کیا کہا گیا، امپائر کوئی نہیں ، امپائر ہم ہیں: مولانا فضل الرحمان

بتایا جائے وزیر اعظم کی تقریر کے خاموش لمحوں میں کیا کہا گیا، امپائر کوئی ...
بتایا جائے وزیر اعظم کی تقریر کے خاموش لمحوں میں کیا کہا گیا، امپائر کوئی نہیں ، امپائر ہم ہیں: مولانا فضل الرحمان

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) جمعیت علماءاسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ وزیر اعظم کو خود اپنی تقریر پر قدرت نہیں ہے، بتایا جائے کہ خاموش لمحوں میں کیا کہا گیا، احتساب کے نام پر سیاسی کھیل کھیلنے والوں کا احتساب ہم خود کریں گے، امپائر کوئی نہیں ہے، امپائر ہم ہیں۔

مولانا فضل الرحمان نے وزیر اعظم عمران خان کے قوم سے خطاب پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ رات کے12 بجے تقریر کرنا یہ کون سی بات ہے؟یہ کون سا وقت ہے قوم سے خطاب کرنے کا؟ ۔ انہوں نے وزیر اعظم کی تقریر میں آنے والی تکنیکی خرابیوں پر بھی سوال اٹھایا اور کہا اس بیچارے کو بھی اپنی تقریر پر قدرت نہیں ہے،بتانا پڑے گا کہ ان خاموش لمحوں میں کیا کہا گیا۔

عمران خان کی جانب سے اپنے خطاب میں غیر محتاط الفاظ کے انتخاب پر مولانا فضل الرحمان نے کہا تمہیں دین اور مذہب کا نہیں معلوم تو بونگی نہ مارا کرو۔

نیب میں پیشی کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ انہوں نے اس ملک میں شرافت کی سیاست کی ہے، وہ انتقامی کاروائیوں سے ڈرنے والے نہیں ہیں، ’ مجھے میرے اکابر نے آزادی کا درس دیا ہے ہم کسی کی غلامی برداشت نہیں کرسکتے، احتساب کے نام پر سیاسی کھیل کھیلنے والوں کا احتساب ہم خود کریں گے‘۔

انہوں نے کہا سلاخوں کے پیچھے جانے سے گھبرانے والے نہیں،سلاخوں کے پیچھے رہنے سے موقف مضبوط ہوتا ہے،امپائر کوئی نہیں ہے، امپائر ہم ہیں۔

مزید : قومی /علاقائی /سندھ /کراچی