ادارہ روزنامہ پاکستان پیارے ساتھی سے محروم ہو گیا

ادارہ روزنامہ پاکستان پیارے ساتھی سے محروم ہو گیا
 ادارہ روزنامہ پاکستان پیارے ساتھی سے محروم ہو گیا

  

صبح گیارہ بارہ بجے ہمارے پیارے بھائی سعید باجوہ کا واٹس ایپ پہ میسج آیا کہ ہمارے پیارے ساتھی غلام مصطفی اب اس دنیا میں نہیں رہے اور اسکے بعد جناب خالد صاحب کا بھی واٹس ایپ پہ یہی پیغام موصول ہوا جی ہاں غلام مصطفی روزنامہ پاکستان اور روزنامہ یلغار کے ہر دلعزیز کارکن تھے جب بھی دیکھا چہرے پہ مسکراہٹ ہی دیکھی جی ہاں ہر وقت ہنستے ہوئے دیکھا اور بتلا دیں کے غلام مصطفی پاکستان کے اکاؤنٹس آفیسر تھے اور یقینا جب سے پاکستان کا آغاز ہوا تب سے ہی غلام مصطفی روزنامہ پاکستان کی ٹیم میں شامل ہوئے جی ہاں اپنے اسٹاف سے اپنے دیگر دوستوں سے خندہ پیشانی سے ملتے تھے اور یقینا جب سے پاکستان اخبار کا آغاز ہوا تب سے ہی میری سلام دعا رہی اور ابھی کچھ عرصہ قبل جناب جمیل قیصر دنیا سے رخصت ہوئے جو کہ روزنامہ پاکستان کے لئے گہرا صدمہ تھا اور اب پھر اچانک یہ خبر سننے کو ملی کہ جناب غلام مصطفی بھی اب ہم میں نہیں رہے اور یہ خبر سن کے ہم بھی گویا سکتے میں آ گئے ذہن میں دل میں دماغ میں غلام مصطفی مرحوم کے ساتھ گزرے لمحات کسی فلم کی طرح سے نظر آ رہے تھے جی ہاں یقینا گہرا صدمہ روزنامہ پاکستان اور روزنامہ یلغار کے دوستوں کے لئے کہ وہ اپنے ایکْ اچھے شفیق پیارے اور محنتی دوست جناب غلام مصطفی سے محروم ہو گئے جی ہاں ہمارے پیارے دوست اس دنیا سے تو رخصت ہو گئے لیکن انکی یاد صدا ہمارے دل میں رہیگی اور ہم ہی کیا تمام کارکنان روزنامہ پاکستان و یلغار اللہ پاک سے دعا گو ہیں کہ اللہ پاک ہمارے پیارے دوست و کارکن جنا ب غلام مصطفی مرحوم کے گناہوں سے درگزر فرمائے مرحوم کے درجات بلند فرمائے اور مرحوم غلام مصطفی کے اہل خانہ اور روزنامہ پاکستان و یلغار کے کارکنان کو بھی صدمہ برداشت کرنے کی توفیق عطاء فرما آمین ثم آمین

مزید :

رائے -کالم -