وزیراعظم جب یوٹرن لیتے ہیں تو بہت دیر ہو چکی ہوتی ہے، چانڈیو

  وزیراعظم جب یوٹرن لیتے ہیں تو بہت دیر ہو چکی ہوتی ہے، چانڈیو

  

اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی ترجمان سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ ہمیشہ دیر کر دیتا ہوں " خان صاحب کا خطاب منیر نیازی کے کلام کی طرح ہے،وزیراعظم پہلے تباہ کن فیصلے کرتے ہیں اور جب یوٹرن لیتے ہیں تو بہت دیر ہو چکی ہوتی ہے،اپنی سلیکشن سے آج تک خان صاحب آپ نے ایک بھی مثبت اور بروقت فیصلہ نہیں کیا،کورونا ہو، معیشت یا ٹڈی دل آج تک کسی بھی بحران کو سمجھا ہی نہیں وزیراعظم نے،پورے ملک میں کورونا پھیلانے اور اموات بڑھانے کے بعد اب کہتے ہیں خود نگرانی کروں گا۔جمعرات کووزیراعظم کے خطاب پر رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے پیپلزپارٹی کے مرکزی ترجمان سینیٹر مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ اگر اب نگرانی کریں گے تو اب تک وزیراعظم ہاؤس میں بیٹھ کر کیا رہے تھے،اب کہتے ہیں کہ ایس او پی پر عمل نہ ہوا تو وہ علاقے اور کاروباری مراکز بند کر دئے جائیں گے،جب چیئرمن بلاول اور حکومت سندھ نے لاک ڈاؤن کیا تو آپ نے اسے ناکام بنایا،کورونا کی وجہ سے جتنا بھی نقصان ہوا ہے اس کے ذمہ دار صرف اور صرف عمران خان ہیں،ہم قوم کو بار بار بتائیں گے کہ کورونا کے پھیلاؤ اور اموات میں اضافے کے ذمہ دار عمران خان ہیں،کاش اس ملک میں حقیقی جمہوریت ہوتی، ادارے غیرجانبدار ہوتے،کاش ملک میں احتساب قانون اور انصاف پر مبنی اور بلاامتیاز ہوتا،اگر ادارے غیرجانبدار اور حقیقی جمہوریت ہوتی تو قوم کو عمران خان کے غیر دانشمندانہ فیصلوں کے نتائج نہ بھگتنے پڑتے۔

چانڈیو

مزید :

صفحہ آخر -