کورونا وبا سے پولیس ٹریننگ سنٹر بھی بند،تربیت نہ ترقیاں، ملازمین پریشان

کورونا وبا سے پولیس ٹریننگ سنٹر بھی بند،تربیت نہ ترقیاں، ملازمین پریشان

  

لاہور(خبرنگار)کورونا کے باعث ٹریننگ سنٹر بند ہونے سے 18ہزار سے زائد پولیس افسران اور اہلکاروں کی ترقی رک گئی جن میں 31 سو سے زائد اہلکارترقی ملنے سے پہلے ہی اپنی عمر پوری ہونے کے باعث ریٹائیر ہو جائیں گے۔ کورونا کے باعث محکمہ پولیس کے ٹریننگ سنٹرز گزشتہ تین ماہ سے بند پڑے ہیں جس کی وجہ سے 18ہزار سے زائد کانسٹیبل سے لیکر ڈی ایس پی عہدہ کے افسران اور اہلکار تربیت حاصل نہ کر سکنے کے باعث اگلے عہدوں پر ترقی سے محروم رہ گئے ہیں۔ اس میں انسپکٹر سے ڈی ایس پی کے عہدہ پر ترقی پانے والے ایک ہزارسے زائد پولیس افسران شامل ہیں جبکہ سب انسپکٹر سے انسپکٹر کے عہدہ سے ترقی نہ پانے والوں کی تعداد 4ہزار، ہیڈ کانسٹبل سے اے ایس آئی کے عہدہ پر ترقی نہ پانے والے اہلکاروں کی تعداد5100 جبکہ کانسٹیبل سے ہیڈ کانسٹیبل کے عہدہ پر ترقی نہ پانے والے اہلکاروں کی تعداد 8209بتائی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق کورونا کے باعث محکمہ پولیس کے 33سنٹرز تین ماہ سے بند پڑے ہیں،جس میں چوہنگ پولیس سنٹرز،سہالہ پولیس ٹریننگ سنٹر کے ساتھ پنجاب کا نسٹیلری (پی سی) ٹریننگ سنٹرز شامل ہیں۔ پولیس ترجمان نے کہا ہے کہ محکمانہ ترقی کا عمل تعطل کا شکار ہے تاہم اس حوالے سے حکمت عملی اختیار کی جا رہی ہے۔

ٹریننگ بند

مزید :

صفحہ آخر -