پی پی کا کورونا صورتحال کے تناظر میں کل اے پی سی بلانے کا فیصلہ

      پی پی کا کورونا صورتحال کے تناظر میں کل اے پی سی بلانے کا فیصلہ

  

پشاور (سٹی رپورٹر)پاکستان پیپلزپارٹی خیبرپختونخوا نے ملک میں کوروناوباء کی سنگین صورتحال کے تناظرمیں حکومت کے غیرسنجیدہ اقدامات کے تداک کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کواکٹھاکرنے کافیصلہ کرتے ہوئے 13جون کوآل پارٹی کانفرنس منعقدکرانے کااعلان کیاہے اورواضح کیاہے کہ حکومتی نااہلی کی وجہ سے آج پوری قوم مشکلات سے دوچار ہے،کوروناسے پیداہونیوالی صورتحال سے توجہ ہٹانے کیلئے باہرسے مسلط کردہ آلہ کاروں کے ذریعے اپوزیشن پرکیچڑاچھالاجارہاہے اس نازک حالات میں اے پی سی وقت کی اہم ضرورت ہے جس میں اپوزیشن جماعتوں کیساتھ مل کرآئندہ کالائحہ عمل طے کیاجائیگا تاہم آل پارٹی کانفرنس میں کسی نااہل حکومت کے نمائندے کو ہرگزمدعونہیں کیاجائیگا۔ان خیالات کااظہار پاکستان پیپلزپارٹی کے صوبائی صدرہمایون خان نے پشاورپریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیااس موقع پرپارٹی کے صوبائی رہنماگوہرنقلابی،ایوب خان اور طلاء محمدبھی موجودتھے۔ہمایون خان نے کہاکہ نااہل حکمرانوں کی وجہ سے کورونا پورے ملک میں پھیل گئی ہے ایک لاکھ سے زائد لوگ کوروناکاشکارہوچکے ہیں اوریہ وہ لوگ ہیں جنہوں نے ٹیسٹ کروائے ہیں وفاقی وخیبرپختونخواحکومتیں لوگوں کوتحفظ دینے اورطبی سہولیات کی فراہمی میں مکمل ناکام ہوچکی ہیں بالخصوص وزیراعظم عمران خان کی غلط پالیسیوں اورجھوٹے وعدوں سے لوگ پریشانی سے دوچارہیں انہوں نے کہاکہ سندھ حکومت کے اقدامات کی عالمی سطح پر پذیرانی ہورہی ہے لیکن وزیراعظم جنہیں صرف اپنی تعریف اچھی لگتی ہے،کواس وقت ملک کی اکائیوں کومتحدکرناچاہئے تھا کوروناکے پھیلاؤمیں وزیراعظم کی جانب سے کوئی کسرنہیں چھوڑی گئی آج لوگ پٹرول کے حصول کیلئے خوارہورہے ہیں جبکہ حکومت کوعوام کی مشکلات کاکوئی احساس نہیں۔انہوں نے کہاکہ اسوقت اپوزیشن کا میڈیاٹرائل ہورہاہے جب تک عدالت فیصلہ نہ کرے الزام کاسامناکرنیوالاشخص صرف ملزم ہوتاہے باہرسے مسلط کردہ لوگ اپوزیشن پربے سروپاکیچڑاچھال رہے ہیں این ایف سی کوچھیڑاکوروناسے توجہ ہٹانے کی سازش ہے 18ویں ترامیم پی پی کااہم کارنامہ ہے سابق صدرزرداری نے اس ترمیم کے ذریعے اپنے اختیارات پارلیمنٹ کومنتقل کئے تھے۔ہمایون خان نے مزیدکہاکہ اوورسیزپاکستانی بھی مشکلات میں گھیرے ہوئے ہیں بیرون ممالک لوگوں کی میتیں پڑی ہوئی ہیں ان کی واپسی کیلئے حکومتی اقداما ت ناکافی ہیں دوسری جانب ٹڈی دل نے کھڑی فصلوں کوتباہ کردیاہے یسانہ ہوکہ مستقبل میں یہاں خوراک کی قلت پیداہوجائے۔انہوں نے اعلان کیاکہ 13جون کوپیپلزپارٹی کے زیراہتمام آل پارٹی کانفرنس منعقد کی جائے گی جس میں تمام اپوزیشن کی سیاسی جماعتوں کودعوت دی جائے گی صوبے سے تعلق رکھنے والی سیاسی قیادت کومدعوکیاجائیگاتاکہ تمام سیاستدان مل بیٹھ کر حکومت کے غیرسنجیدہ قدامات کیخلاف اپنالائحہ عمل طے کریں نااہل حکومتی نمائندوں کوکانفرنس میں ہرگزدعوت نہیں دی جائیگی انہوں نے وضاحت کی کہ پارٹی میں کوئی اختلافات نہیں البتہ اختلاف ہرکسی کاحق اوریہ جمہوریت کاحسن ہے۔انہوں نے کہاکہ امریکی خاتون رچی کو9سال بعد الزامات کی یاد کیسے آئی؟یہ صرف کوروناسے توجہ ہٹانے کیلئے ہورہاہے پی پی پی نے ہمیشہ عوام کی بات کی ہے یہ وقت سیاست کانہیں ہم تمام اختلاف بھلاکر قومی ایشوپرحکومت کاساتھ دینے کوتیار ہیں لیکن وزیراعظم میں اتنی جرات نہیں کہ وہ اپوزیشن کاسامناکرسکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -