لاک ڈاون،پابندیاں، پاکستان میں کتنے لوگوں کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے؟ اعدادوشمار جاری

لاک ڈاون،پابندیاں، پاکستان میں کتنے لوگوں کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے؟ ...
لاک ڈاون،پابندیاں، پاکستان میں کتنے لوگوں کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے؟ اعدادوشمار جاری

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان  آن لائن)اقتصادی سروے رپورٹ کے مطابق ملک بھرمیں کوروناوائرس کی وجہ سے لگائے گئے لاک ڈاون اور پابندیوں کی وجہ سے 14لاکھ سے ایک کروڑ لوگوں کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے۔

ڈان نیوز کے مطابق اقتصادی سروے میں کہا گیا ہے کہ اگر محدود پابندیاں لگائیں تو بھی ملازمت پیشہ افراد کا 2.2فیصد یعنی 14لاکھ افراد کے بے روزگارہونے کا خدشہ ہے۔  جبکہ اجرت کے حوالے سے 23ارب 60کروڑ روپے کے نقصان کا تخمینہ لگایا گیا ہے۔

 رپورٹ کے مطابق ہلکے پھلکے لاک ڈاون سے ملازمت پر موجود افراد کا بیس فیصد یعنی ایک کروڑ 23لاکھ افراد کے بے روزگار ہونے کا خدشہ ہے جس سے اجرت میں 209ارب ساٹھ کروڑ روپے کا نقصان متوقع ہے۔

اقتصادی سروے کے مطابق اگر مکمل شٹ ڈاؤن کیا جاتا ہے تو توقع کی جاتی ہے کہ ایک کروڑ 85 لاکھ افراد کل ملازمت پر موجود افراد میں سے 30 فیصد روزگار ہوجائیں گے، جس کا اجرت کے حوالے سے 315 ارب روپےہوگا۔

حکومت نے مزدور اور روزگار پر کورونا وائرس کے اثرات سے نمٹنے کے لیے حکمت عملی تیار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ سروے کے مطابق وفاقی کابینہ نے پاکستان میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور اس کے نقصانات سے نمٹنے کے لیے 12 کھرب 40 ارب روپے کے وزیر اعظم کے اقتصادی ریلیف پیکیج کی منظوری دی ہے۔

مزید :

قومی -بزنس -کورونا وائرس -