ماضی کی حکومتوں کے لیے گئے قرض پر کتنا سود اداکیا؟ بجٹ تقریر میں اعدادوشمار بتادیئے گئے

ماضی کی حکومتوں کے لیے گئے قرض پر کتنا سود اداکیا؟ بجٹ تقریر میں اعدادوشمار ...
ماضی کی حکومتوں کے لیے گئے قرض پر کتنا سود اداکیا؟ بجٹ تقریر میں اعدادوشمار بتادیئے گئے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کی جانب سے اس وقت قومی اسمبلی میں دوسرا سالانہ بجٹ پیش کیا جارہا ہے۔ اپنی بجٹ تقریر کے آغاز میں وفاقی وزیر حماد اظہر نے بتایا کہ تحریک انصاف حکومت کو معاشی بحران ورثے میں ملا۔

اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کے اجلاس میں وزیر صنعت و پیداوار حماد اظہر بجٹ پیش کر رہے ہیں۔

قومی اسمبلی میں مالی سال 21-2020 کی بجٹ تجاویز پیش کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے صنعت حماد اظہر نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا دوسرا سالانہ بجٹ پیش کرنا میرے لیے اعزاز کی بات ہے۔

 انہوں نے کہا ان کی حکومت نے گزشتہ عرصے میں مجموعی طور پر پانچ ہزار ارب روپے صرف سود کی مد میں اداکیے، یہ سود اس قرض پر اداکیاگیا جو گزشتہ حکومتوں نے لیا تھا۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -بجٹ -بزنس -