”حکومت کی گزشتہ برس کی کارکردگی دیکھتے ہوئے یہ توقع نہیں تھی کہ بجٹ میں۔۔۔“ نوید قمر بھی میدان میں آ گئے

”حکومت کی گزشتہ برس کی کارکردگی دیکھتے ہوئے یہ توقع نہیں تھی کہ بجٹ میں۔۔۔“ ...
”حکومت کی گزشتہ برس کی کارکردگی دیکھتے ہوئے یہ توقع نہیں تھی کہ بجٹ میں۔۔۔“ نوید قمر بھی میدان میں آ گئے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان پیپلزپارٹی (پی پی پی) نے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کا پیش کردہ دوسرا وفاقی بجٹ مسترد کر دیا ہے اور پیپلز پارٹی کے رہنماءنوید قمر نے کہا کہ حکومت کی گزشتہ برس کی کارکردگی کو دیکھتے ہوئے عوام کو ریلیف دینے والے بجٹ کی توقع نہیں تھی۔

تفصیلات کے مطابق نوید قمر نے کہا کہ افراط زر سے عام آدمی کی قوت خرید میں ہونے والی کمی کی وجہ سے توقع تھی کہ تنخواہوں میں اضافہ ہو گا لیکن ایسا نہیں کیا گی۔ حکومت نے بجٹ میں سنگدلی کا مظاہرہ کرتے ہوئے عوام کو کوئی ریلیف نہیں دیا جس کے باعث اب سرکاری ملازم امسال 10 فیصد کم خریداری کرسکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے کورونا کے بعد کی صورت حال سے نمٹنے کیلئے بجٹ میں عوام کو کوئی ریلیف نہیں دیا جبکہ صنعتوں کو مراعات تو ایف بی آر اپنے ایس آر اوز کے ذریعے کرتا رہتا ہے۔ نوید قمر نے کہا کہ ’بجٹ میں صوبوں کے ساتھ مل کر اخراجات کے معاملے پر بھی بجٹ میں کوئی بات نظر نہیں آئی‘۔

مزید :

قومی -